ہفتہ , 11 جولائی 2020

تمباکو کمپنياں بچوں کو راغب کرنے کے ليے خطرناک ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہيں، ڈبلیو ایچ او

عالمی ادارہ صحت نے خبردار کيا ہے کہ تمباکو کمپنياں بچوں کو تمباکو نوشی کی طرف راغب کرنے کے ليے ’خطرناک اور جان ليوا‘ ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہيں۔ ڈبليو ايچ او کے مطابق يہ حيرانی کی بات نہيں کہ سگريٹ نوشی شروع کرنے والے زيادہ تر افراد کی عمر اٹھارہ برس سے بھی کم ہوتی ہے۔ اس ادارے نے مزيد بتايا کہ تيرہ سے پندرہ برس تک کی عمر کے درميان چواليس ملين بچے اس وقت سگريٹ نوشی کے عادی ہيں۔ اس بارے میں عالمی ادارہ صحت نے اپنی ایک رپورٹ اتوار اکتیس مئی کو منائے جانے والے ’ورلڈ نو ٹوبيکو ڈے‘ کے سلسلے ميں جاری کی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

چین کے خودمختار علاقے منگولیا میں طاعون کا مصدقہ کیس، حکام نے الرٹ جاری کردیا

بیجنگ: چین کے خود مختار علاقے منگولیا میں طاعون کے کیس کی تصدیق ہونے کے …