جمعرات , 2 جولائی 2020

سندھ حکومت نے اندرون شہر ٹرانسپورٹ چلانے کی اجازت دے دی

سندھ حکومت نے کراچی شہر میں میں پبلک ٹرانسپورٹ اور سفری سہولیات کی دیگر سروسز بحال کرنے کا اعلان کردیا۔سندھ حکومت اور ٹرانسپورٹرز کے درمیان مزاکرات کامیاب ہونے کے بعد حکومت نے اندرون شہر چلنےوالی ٹرانسپورٹ کھولنے کی اجازت دی۔وزیر ٹرانسپورٹ نے ایس او پیز پر عملد رآمد کے لیے مانیٹر نگ اور انسپیکشن کمیٹٰ بھی قائم کردی جس میں ٹرانسپورٹ اور ریونیو کے افسران شامل ہون گے۔وزیر ٹرانسپورٹ کا کہنا تھا کہ تمام ٹرانسپورٹرز کو بنائی گئی ایس او پیز پر عمل کرنا پڑیگا اور ایس او پیز پر عمل نہ کیا گیا تو گاڑیاں بند کردی جائیں گی۔

ان کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس کا ہم سب نے مقابلہ کرنا ہے، جو بھی ہوگا کراچی کے عوام کے مفاد کے لیے ہوگا۔انہوں نے بتایا کہ مسافر گاڑیوں میں ماسک، سینی ٹائز لازمی ہوگا اور جس گاڑی میں ماسک، سینیی ٹائزر نہیں ہوگا اس کہ خلاف کارروائی ہوگی۔اویس شاہ کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت آج رات تک نوٹیفکیشن جاری کردے گی۔اویس شاہ کا کہنا تھا کہ منظور شدہ اڈوں سے گاڑیاں نکلیں گیں، خلاف ورزی پر کارروائی ہوگی،اگر ایس او پیز پر عمل نہ ہوا اور کورونا میں اضافہ ہوا تو ٹرانسپورٹ بند کردیں گے۔تاہم ان کا کہنا تھا کہ ایک شہر سے دوسرے شہر چلنے والی ٹرانسپورٹ بند ہوگی۔

آن لائن ٹرانسپورٹ سروسز
سندھ حکومت نے اندرون شہر چلنے والی آن لائن ٹیکسی سروس کو بھی اجازت دی اور کہا کہ اس میں صرف 2 افراد کو بیٹھنے کی اجازت ہوگی۔ان کا کہنا تھا کہ ہنگامی صورتحال میں ٹیکسی میں مزید ایک شخص کو ساتھ بٹھایاجاسکے گا۔اس کے علاوہ انہوں نے بتایا کہ آن لائن بس سروس کو بھی کام کرنے کی اجازت ہوگی تاہم بس میں ایئرکنڈیشن چلانے کی اجازت نہیں ہوگی۔انہوں نے کہا کہ جو ٹرانسپورٹر اے سی چلائےگا وہ ایک سیٹ چھوڑ کر ایک مسافر بٹھائے گا۔

یہ بھی دیکھیں

اسٹاک ایکسچینج حملہ: دہشتگردوں کو افغانستان سے ہدایات ملنے کا انکشاف

پاکستان اسٹاک ایکسچینج حملے سے متعلق تحقیقات میں اہم پیش رفت ہوئی ہے۔تفتیشی ذرائع کے …