پیر , 13 جولائی 2020

امریکا کی آدھی آبادی نے ٹرمپ کو نسل پرست قرار دیدیا

امریکا کی آدھی سے زيادہ آبادی نے صدر ٹرمپ کو نسل پرست قرار دے دیا ہے۔امریکی صدر ٹرمپ کو نسل پرست کہی جانے کی بات کا انکشاف حالیہ سروے میں ہوا جہاں باون فیصد امریکیوں نے کہا کہ ‘وہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو نسل پرست سمجھتے ہیں’۔سروے ميں شامل سینتیس فیصد امریکیوں کے خیال میں ٹرمپ نسل پرست نہیں ہیں۔ صدر ٹرمپ کو حریف سیاسی جماعت ڈیموکریٹ کے سینیٹرز بھی نسل پرست قرار دے چکے ہيں۔

سروے کے مطابق صدر ٹرمپ کو نسل پرست سمجھنے والوں ميں ڈیمو کریٹس، سیاہ فام اور لاطینی امریکنز کی تعداد زيادہ ہے جبکہ ری پبلکنز میں سے بھی تیرہ فیصد نے صدر ٹرمپ کو نسل پرست قرار دیا۔سفید فام امریکیوں کی اس بارے میں منقسم رائے سامنے آئی۔واضح رہے کہ امریکا میں سیاہ فام شخص جارج فلائیڈ کی پولیس اہلکار کے تشدد سے ہلاکت کے بعد کئی شہروں میں احتجاج کا سلسلہ جاری ہے۔احتجاج کے دوران کئی شہروں میں لوٹ مار، جھڑپیں اور آنسوگیس کی شیلنگ کے واقعات بھی ہوئے۔

یہ بھی دیکھیں

عراق؛ حشد الشعبی کی کارروائی میں متعدد خودکش بمبارہلاک

عراقی ذرائع کا کہنا ہے کہ عوامی رضاکار فورسز اور سرکاری فوج نے امریکی حمایت …