پیر , 13 جولائی 2020

شاہی حکومت کی سرنگونی اور اسلامی انقلاب کی تحریک کے آغاز کا دن

15خرداد مطابق 4 جون، ایران کی تاریخ میں بہت اہمیت کا حامل ہے۔ 15 خرداد 1342 ہجری شمسی مطابق چار جون 2020 کو بانی انقلاب اسلامی حضرت امام خمینی رحمت اللہ علیہ کی قیادت میں اسلامی انقلاب کی تحریک کے آغاز کا دن ہے۔ شاہی حکومت کے جاسوسوں نے حکومت مخالف مظاہروں کو کچلنے کے مقصد سے مدرسہ فیضیہ پر حملہ کر کے بڑی تعداد میں طلبہ کو شہید اور زخمی کر دیا اور ایک بڑی تعداد کو گرفتار کرلیا ۔ یہی وہ دن تھا کہ جب شاہ کی حکومت کے سقوط کی شروعات اور اسلامی انقلاب کی کامیابی کی بنیاد رکھی گئی۔

بانی انقلاب اسلامی حضرت امام خمینی رحمت اللہ علیہ نے 1963 میں شاہ کی ظالم حکومت کے خلاف اپنی تحریک اور جدو جہد کو آخری مرحلے میں پہنچا دیا اور ایک عشرے سے زیادہ عرصے تک بیرون ملک جلا وطنی سمیت بہت زیادہ سختیوں کو برداشت کیا۔ حضرت امام خمینی رحمت اللہ علیہ کے فرمان پر پندرہ خرداد مطابق چار جون کو ایران میں یوم سوگ کے طور پر منایا جاتا ہے-

واضح رہے کہ ایران کے مقدس شہر قم میں واقع مدرسۂ فیضیہ میں، 57 سال قبل اسی دن، عاشور کی تقریر میں حضرت امام خمینی رحمت اللہ علیہ نے شاہی حکومت کی اسلام مخالف پالیسیوں اور صیہونی حکومت کے ساتھ اس کے روابط اور سازشوں کا پردہ فاش کیا تھا ۔ اس خطاب کے بعد شاہی حکومت کے کارندوں نے آپ کو گرفتار کر لیا تھا۔ حضرت امام خمینی رحمت اللہ علیہ کی گرفتاری کے بعد ایران کے مختلف شہروں میں عوام سڑکوں پر نکل آئے اور پورے ایران میں عوام کے احتجاجی مظاہرے شروع ہوگئے۔

یہ بھی دیکھیں

شمالی وزیرستان میں پاک فوج کا آپریشن، 4 جوان شہید، چاردہشت گرد مارے گئے

راولپنڈی: شمالی وزیرستان میں دہشت گردوں کے خلاف آپریشن میں پاک فوج کے چار جوان …