اتوار , 12 جولائی 2020

فیس بک کا نفرت پھیلانے والے اشتہارات پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ

سماجی رابطوں کے مقبول ترین پلیٹ فارم فیس بک کے بانی مارک زکر برگ کا کہنا ہے کہ وہ فیس بک کی پالیسی کو تبدیل کریں گے تاکہ اشہارات کے ذریعے نفرت انگیزی کے پھیلاؤ کو روکا جاسکے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق نئی پالیسی کے تحت فیس بک ان تمام اشتہاروں پر پابندی عائد کرے گا جو کسی خاص نسل، قومیت، ذات پات، صنف، جنسی رجحان یا کسی کی جسمانی حفاظت یا صحت کے لیے خطرہ ہیں۔

فیس بک کے بانی مارک زکر برگ کا کہنا ہے کہ میں اس بات کو یقینی بنانے کے لیے پُرعزم ہوں کہ فیس بک ایسی جگہ بنی رہے جہاں لوگ اپنی آواز کو اہم امور پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے استعمال کرسکیں۔انہوں نے کہا کہ  میں نفرت اور کسی بھی ایسی چیز کے خلاف کھڑا ہوں جو تشدد کو ہوا دیتے ہیں اور ہم اس طرح کے مواد کو ہٹانے کے لیے پُرعزم ہیں چاہے وہ کہیں سے بھی آئے۔مارک زکر برگ کا کہنا تھا کہ ہم تارکین وطن اور پناہ گزینوں کو ان اشتہارات سے (جو ان کی توہین اور انہیں کم تر ظاہر کرتے ہیں) محفوظ رکھنے کے لیے زیادہ سے زیادہ اقدامات کریں گے۔

یہ بھی دیکھیں

سام سنگ کا سب سے طاقتور بیٹری والا نیا اسمارٹ فون

سام سنگ اپنا سب سے طاقتور بیٹری والا نیا اسمارٹ فون متعارف کرانے پر کام …