ہفتہ , 17 اپریل 2021

امریکا کو کثیرالجہتی دنیا میں کام کرنے کا سلیقہ نہیں آتا، بھارتی وزیر

اسلام آباد: بھارت کے وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ بدلتے ہوئے عالمی ماحول میں، امریکہ کو کثیر قطبی دنیا میں کام کرنے کا فن سیکھنے کی ضرورت ہے۔ابلاغ نیوز نے تسنیم خبررساں ادارے کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ بھارتی وزیرایس جے شنکر نے یو ایس انڈیا بزنس کونسل کی سالانہ کانفرنس میں کہا کہ امریکہ کو اب ان اتحادوں سے آگے بڑھنا ہوگا جس کے ساتھ وہ گذشتہ دو نسلوں کے ساتھ ہے اور اسے ایسی دنیا میں کام کرنے کا فن سیکھنا چاہیئے جو کثیر قطبی اور کثیرالجہتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ بھارت اور امریکہ کو زیر التواء پڑے تجارتی مسائل کو حل کرنے کے لیے وسیع پیمانے پر سوچنے کی ضرورت ہے۔ایس جے شنکر نے کہا کہ مجھے یقین ہے کہ یہ دونوں ممالک کے مفاد میں ہوگا اور ہمیں زیر التواء معاملات کو حل کرنا ہوگا اور بڑے اہداف پر کام کرنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ میں معاشی تعلقات کی اہمیت کو سمجھتا ہوں۔ یہ ہماری روزی روٹی کے مسائل ہیں اور ممالک کے مابین باہمی تعلقات کی اصل وجہ ہیں، لیکن ساتھ ہی میں یہ بھی مانتا ہوں کہ بھارت اور امریکہ کو اس سے آگے سوچنے کی ضرورت ہے۔ بھارت کے وزیر خارجہ نے کہا کہ بھارت اور امریکہ کو ٹیکنالوجی اور جدت کے میدان میں مل کر کام کرنے کی ضرورت ہے۔ایس جے شنکر نے یہ باتیں ایک ایسے وقت میں کہی ہیں جب پوری دنیا کورونا وائرس کی وباء کی لپیٹ میں ہے اور بھارت چین سرحد پر طویل مدتی تناؤ جاری ہے۔ ایس جے شنکر نے گذشتہ ہفتے کہا تھا کہ بھارت کبھی بھی کسی دھڑے کا حصہ نہیں بنے گا۔

یہ بھی دیکھیں

میزائل تجربے پر تنقید : شمالی کوریا نے اقوام متحدہ پر چڑھائی کردی

شمالی کوریا نے میزائل ٹیسٹ کے بعد پابندیوں کی تجویز پر اقوام متحدہ پر چڑھائی …