منگل , 13 اپریل 2021

امریکا نے ایرانی جہاز کو ہراسان کرنے کا اعتراف کر لیا

واشنگٹن: دہشت گرد امریکی فوجی کمانڈ سینٹ کام کے ترجمان نے ایرانی مسافر طیارے کے لیے مزاحمت کا اعتراف کیا ہے۔ابلاغ نیوز نے عالمی ذرائع ابلاغ کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ سینٹ کام کے ترجمان بل آربین نے دعوی کیا ہے کہ ایف پندرہ امریکی طیارہ کا یہ اقدام التنف بیس میں موجود بین الاقوامی فوج کی حفاظت کی غرض سے انجام دیا گیا۔ بل آربین نے دعویٰ کیا کہ امریکہ کے ایک ایف پندرہ طیارے نے، ایرانی طیارے کے مسافر بردار ہونے کا اطمینان حاصل کرنے کے بعد حفاظتی معیار کو برقرار رکھتے ہوئے اس سے دوری اختیار کر لی تھی۔انہوں نے یہ بھی دعوی کیا کہ امریکی جنگی طیاروں کا یہ اقدام مکمل طور پر پیشہ وارانہ اور عالمی قوانین اور ضابطوں کے مطابق تھا۔ جبکہ ماہرین، امریکا کے اس  دعوے کو مضحکہ خیز قرار دے رہے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

میزائل تجربے پر تنقید : شمالی کوریا نے اقوام متحدہ پر چڑھائی کردی

شمالی کوریا نے میزائل ٹیسٹ کے بعد پابندیوں کی تجویز پر اقوام متحدہ پر چڑھائی …