منگل , 13 اپریل 2021

برطانوی کرنسی پرسفید فام افراد کے علاوہ کسی اور رنگ و نسل کے فرد کو شامل نہیں کیا گیا ہے

اسلام آباد: سیاہ فام، ایشیائی اور اقلیتی گروہوں سے تعلق رکھنے والی شخصیات پہلی بار برطانوی کرنسی نوٹوں اور سکوں پر نمایاں ہوں گی۔ابلاغ نیوز نےبرطانوی اخبار سنڈے ٹیلی گراف کا حوالہ دیتے ہوئے لکھا ہے کہ چانسلر رشی سونک اس سلسلے میں قانونی ٹینڈر کے لیے ایک مہم چلانے والے گروپ کی تجاویز پر غور کر رہے ہیں۔رشی سونک نے رائل منٹ سے کہا ہے کہ ان شخصیات کو اس اعزاز سے نوازنے کے لیے نئے ڈیزائن پیش کریں۔اس سلسلے میں جن شخصیات کے ناموں پر غور کیا جا رہا ہے، ان میں ملٹری نرس میری سیول اور دوسری عالمی جنگ کی جاسوس نور عنایت خان شامل ہیں۔

بینک نوٹ آف کلر کمپین کی سربراہی سابقہ کنزرویٹو پارلیمانی امیدوار زہرہ زیدی کر رہی ہیں۔وہ کہتی ہیں کہ برطانوی کرنسی پر آج تک سفید فام افراد کے علاوہ کسی اور رنگ و نسل کے فرد کو شامل نہیں کیا گیا ہے۔انھوں نے بی بی سی نیوز کو بتایا ’ہمارے قانونی ٹینڈر، ہمارے نوٹ اور ہمارے سکوں پر کون ہے، یہی چیزیں بحثیت ایک قوم ہماری شناخت کرتی ہیں۔‘’ہر طرح کا پس منظر رکھنے والے لوگوں نے برطانیہ کی تعمیر میں مدد کی۔ اقلیتی گروہوں سے تعلق رکھنے والے افراد وہ ہیں جنھوں نے قوم کی خدمت کی ہے ۔ جیسے فوجی شخصیات اور نرسیں ۔ ایسی شخصیات کے ناموں کو مجوزہ سکوں کے سیٹ کے لیے آگے بھیج دیا گیا ہے۔‘دو سال قبل زہرہ زیدی نے برطانوی خفیہ ایجنٹ نور عنایت خان کی شکل سکّوں پر لانے کے لیے مہم شروع کی تھی، لیکن کسی کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگی۔

یہ بھی دیکھیں

میزائل تجربے پر تنقید : شمالی کوریا نے اقوام متحدہ پر چڑھائی کردی

شمالی کوریا نے میزائل ٹیسٹ کے بعد پابندیوں کی تجویز پر اقوام متحدہ پر چڑھائی …