جمعہ , 30 اکتوبر 2020

نشے کے عادی شخص نے نشہ نہ ملنے پر چھری نگل لی

بھارت میں نشے کے عادی شخص نے نشہ نہ ملنے پر باورچی خانے میں استعمال ہونے والی چھری نگل لی جسے ڈاکٹرز نے آپریشن کر کے بحفاظت نکال لیا۔بھارتی خبررساں ادارے اے این آئی کی رپورٹ کے مطابق ہریانہ سے تعلق رکھنے والا 28 سالہ شخص چرس کا عادی تھا اور ڈاکٹرز نے بتایا کہ اس نے چرس نہ ملنے پر ڈیرھ ماہ قبل چھری نگل لی تھی۔ڈاکٹروں کا مزید کہنا تھا کہ وہ چھری نگلنے کے بعد بھی معمول کی زندگی گزار رہا تھا اور اس کے اہلِ خانہ اس صورتحال سے ناواقف تھے۔

تاہم ڈیڑھ ماہ بعد جب اسے پیٹ میں شدید در محسوس ہونے لگا تو اہلِ خانہ اسے لے کر ہسپتال پہنچے اور جب ایکسرے رپورٹ آئی تو سب حیرت زدہ رہ گئے کہ مریض کے پیٹ میں 20 سینٹی میٹر طویل چھری موجود تھی۔بعدازاں نئی دہلی کے آل انڈیا انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز کے ڈاکٹروں نے آپریشن کر کے چھری بحفاظت جسم سے نکال دی۔ڈاکٹر نے بتایا کہ سرجری بہت مشکل تھی اور چھری آدمی کے جگر کے قریب پہنچ چکی تھی اور مریض کے پیٹ سے چھری نکالنے کے لیے آپریشن میں تقریباً 3 گھنٹے کا وقت لگا۔

ڈاکٹر نے مزید بتایا کہ سرجری انتہائی پیچیدہ تھی کیوں کہ چھری جگر اور پتے کے درمیان خون کی نالیوں کے قریب تھی اور ذرا سی بھی غلطی مریض کی زندگی کے لیے خطرہ بن سکتی تھی اس لیے ہر چیز بہت منصوبہ بندی سے کی گئی۔ڈاکٹر نے بتایا کہ پہلے ریڈیالوجسٹس نے مریض کے پھیپھڑوں اور جگر سے پیپ صاف کی تاکہ انفیکشن کو مزید پھیلنے سے روکا جاسکے اس کے بعد ماہر نفسیات سے کاؤنسلنگ کروا کر اسے سپلمنٹس دیے گئے تا کہ اس پیچیدہ سرجری کو برداشت کرنے کی طاقت پیدا ہو۔آپریشن کے دوران مریض کو زیر نگرانی رکھا گیا البتہ وارڈ میں شفٹ کردیا گیا جہاں اس کی حالت سنبھل رہی ہے۔ڈاکٹروں کا کہنا تھا کہ یہ پہلا کیس ہے کہ مریض نے چھری نگل لی اور اس کی زندگی محفوظ رہی ورنہ اب تک انہوں نے سوئی، پنز اور فش ہک نگلنے کے واقعات ہی دیکھے تھے۔

یہ بھی دیکھیں

یہ دنیا کی ’سب سے سیاہ‘ مچھلی ہے

لاس اینجلس: امریکی سائنسدانوں کی ایک ٹیم نے سمندر کی اتھاہ و تاریک گہرائیوں سے …