پیر , 12 اپریل 2021

آزاد فلسطینی ریاست کی تشکیل ہماری ناقابل تغیر پالیسی ہے: امیرِ قطر

دوحہ: امیر قطر نے امریکی صدر کے داماد اور مشیر اعلی سے مطالبہ کیا ہے کہ فلسطین میں دو ریاستی فارمولے کو نافذ کیا جائے۔

شیخ تمیم بن حمد آل ثانی نے بدھ کے روز دوحہ میں جیریڈ کوشنر سے ملاقات کی۔ اس ملاقات میں انھوں نے اس بات پر زور دیا کہ آزاد فلسطینی ریاست کا قیام، قطر کی مستقل پالیسیوں میں شامل ہے۔ قطر کے شاہی محل نے ایک بیان جاری کر کے بتایا ہے کہ دونوں رہنماؤں کی ملاقات میں مشرق وسطی کے خطے میں امن کے عمل کا جائزہ لیا گیا۔ بیان کے مطابق، امیر قطر نے اس ملاقات میں کہا کہ فلسطین کے بارے میں ان کے ملک کی پالیسی مستقل اور ناقابل تغیر ہے اور دوحہ بین الاقوامی قوانین اور قراردادوں کے مطابق اس مسئلے کا منصفانہ حل چاہتا ہے۔ انھوں نے اسی طرح کہا کہ ان کا ملک فلسطینی ریاست کے قیام کے بدلے عرب ممالک کی جانب سے اسرائیل کو تسلیم کرنے کے عرب امن منصوبے اور دو ریاستی حل کے فارمولے پر قائم ہے۔

ٹرمپ کے داماد اور مشیر سے ملاقات میں قطر کے بادشاہ شیخ تمیم کا یہ بیان ایسے عالم میں سامنے آیا ہے جب حال ہی میں متحدہ عرب امارات نے امریکہ کی ثالثی سے صیہونی حکومت کے ساتھ تعلقات کے قیام کا معاہدہ کیا ہے۔ اس کے بعد کوشنر نے اسرائیل کے قومی سلامتی کے مشیر کے ساتھ امارات کا دورہ کیا جس میں انھوں نے دوسرے عرب ملکوں کو صہیونی حکومت کے ساتھ تعلقات استوار کرنے کی ترغیب دلانے کی کوشش کی۔ اس دورے میں انھوں نے سعودی عرب اور بحرین کے حکام سے بھی بات چیت کی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …