ہفتہ , 17 اپریل 2021

بیس ستمبر سے ایران پر امریکہ کی جانب سے پابندیاں لگانے کا قانونی جواز ختم ہوجائےگا

ماسکو: روس کے نائب وزير خارجہ سرگئی ریابکوف نے کہا ہے کہ بیس ستمبر سے ایران پر امریکہ کی جانب سے پابندیاں لگانے کا قانونی جواز ختم ہوجائےگا۔

روس کے نائب وزير خارجہ سرگئی ریابکوف نے کہا ہے کہ بیس ستمبر سے ایران پر امریکہ کی جانب سے پابندیاں لگانے کا قانونی جواز ختم ہوجائےگا۔ روسی نائب وزیر خارجہ نے کہا کہ مشترکہ ایٹمی معاہدے میں شامل تمام فریقوں نے امریکہ کی جانب سے ایران پر عائد یکطرفہ پابندیاں مسترد کردی ہیں۔ روس کے نائب وزیر خارجہ سرگئی ریابکوف نے کہا کہ ہمیں ایسی امریکی انتظامیہ سے ڈیل کرنا پڑرہا ہے جو کامن سینس تک قبول کرنے کو تیار نہیں۔ انہوں نے کہا کہ مشترکہ ایٹمی معاہدے پر دستخط کرنے والے دیگر ممالک چین، برطانیہ، فرانس، جرمنی اور یورپی یونین کا بھی اس معاملے پر یہی موقف ہے۔ بیس اگست کو اقوام متحدہ میں پیش امریکی قرارداد کی پندرہ میں سے تیرہ اراکین نے یا تو مخالفت کی تھی یا ووٹنگ میں حصہ ہی نہیں لیا تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ معاہدے سے یکطرفہ طور پر سن دوہزار اٹھارہ میں الگ ہوکر امریکہ اس معاملے میں کسی بھی اقدام کا حق کھو چکا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …