جمعرات , 15 اپریل 2021

چین نے امریکہ کو سب سےبڑا معاشی جھٹکا دے دیا

ابلاغ نیوز نے سی این بی سی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ چین نے دنیا کے سب سے بڑے تجارتی معاہدے میں 14ممالک کو اپنے ساتھ ملا کر امریکہ کو سب سے بڑا جھٹکا دے دیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق چین نے یہ معاہدہ 14ایشیاء پیسیفک ممالک کے ساتھ کیا ہے جو دنیا کا سب سے بڑا تجارتی معاہدہ ہے اور تجزیہ کاروں کا اس معاہدے کی نوعیت کے بارے میں کہنا ہے کہ اس معاہدے کی بدولت خطے میں چین کا سیاسی و معاشی اثر و رسوخ بہت زیادہ بڑھ جائے گا۔

اس معاہدے کا نام رینجنل کمپری ہینسو اکنامک پارٹنرشپ ہے۔ اس معاہدے میں شامل ممالک 2.2ارب افراد کی مارکیٹ قرار پاتے ہیں اور 26.2ٹریلین ڈالر بین الاقوامی پیداوار کے حامل ہے۔چنانچہ اس لحاظ سے یہ دنیا کا سب سے بڑا تجارتی بلاک بن گیا ہے جس کی قیادت چین کے ہاتھ میں ہے اور امریکہ کو اس میں شامل نہیں کیا گیا۔یہ تجارتی بلاک امریکہ، میکسیکو، کینیڈا معاہدے اور یورپی یونین سے بھی بڑا ہے۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ اس معاہدے کا طے پانا چین کی سیاسی فتح ہے ۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …