جمعرات , 15 اپریل 2021

امریکی عہدیدار کے صیہونی بستی کے دورے کے خلا ف احتجاجی مظاہرے

رواں ہفتے امریکی وزیر خارجہ مائک پومپیو کا مقبوضہ فلسطین کے مغربی کنارے میں صہیونی غیر قانونی بستیوں کے متوقع دورے کے خلاف فلسطینی باشندوں کےاحتجاجی مظاہرے شدت اختیارکرگئے ہیں جن کی روک تھام کرتے ہوئےمظاہرین کی صہیونی فوج  کے ہاتھوں پر تشدد گرفتاریاں جاری ہیں۔

اطلاعات کے مطابق صہیونی حکام اور امریکہ کے خلاف ان مظاہروں میں شریک افرادکا کہنا ہےکہ ہماری آبائی زمین کے بہت بڑے حصے میں صہیونی آبادکاروں کے لیے قائم کردہ ان بستیوں کا جال مغربی کنارے میں اسرائیلیوں کے پھیلائے ہوئے نیٹ ورک کا ایک حصہ ہے جو بین الاقوامی قانون کے تحت بھی ناجائز  ہے ۔

احتجاجی مظاہروں میں ان علاقوں سے تعلق رکھنے والی دو بہنوں کائنات اور کریمہ قوران کا کہنا تھا کہ ان کے پاس دستاویزات موجود ہیں جن کے مطابق مغربی کنارے میں ان کے پاس زمین کا ایک پلاٹ ہے جس پر صہیونیوں نے ناجائز قبضہ کر کے ایک شراب خانہ تعمیر کر لیا ہے ۔

ان  کی اپنی زمین  اپنی جائیداد موجود ہے جس میں وہ اور انکے باپ دادا رہا کرتے تھے اور آج وہ زمیں صہیونیوں نے طاقت کےزور پر ان سے چھین لی ہے

واضح رہے کہ یہ پہلا موقع ہے کہ کسی امریکی عہدے دار نےمقبوضہ فلسطین میں صہیونی غیر قانونی بستیوں کے دورےکا اعلان کیاہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …