جمعرات , 15 اپریل 2021

ایٹمی میزائلوں سے لیس ممالک ایران کو میزائل بنانے سے روک رہے ہیں ، رہبر انقلاب

رہبر انقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے ایک بار پھر اغیار پر اعتماد نہ کرنے کی نصیحت فرمائی ہے۔

رہبر انقلاب اسلامی آیت العظمی سید علی خامنہ ای نے پابندیوں کو ایک تلخ حقیقت اور ایرانی عوام کے خلاف امریکہ اور یورپی ملکوں کا گھناؤنا جرم قرار دیا۔

رہبر انقلاب اسلامی نے مجریہ، مقننہ اور عدلیہ کے سربراہوں نیز سپریم اکنامک کونسل کے دیگر ارکان سے خطاب کرتے ہوئے فرمایا کہ ایرانی عوام کے خلاف یہ گھناؤنا جرم برسوں سے انجام دیا جا رہا ہے لیکن پچھلے تین برس کے دوران اس میں مزید شدت پیدا ہو گئی ہے۔

منگل کی صبح ہونے والی اس ملاقات میں آیت اللہ العظمی خامنہ ای نے پابندیوں پر غلبہ پانے اور انہیں غیر موثر بنانے کے طریقہ کار کا ذکر کرتے ہوئے فرمایا کہ شروع میں سختیاں اور مشکلات ضرور پیش آئیں گی لیکن محنت، جدت عمل اور مشکلات کے مقابلے میں سینہ سپر ہوکر، پابندیوں پر غلبہ پایا جا سکتا ہے۔ آپ نے فرمایا کہ جب فریق مقابل پاپندیوں کو بے اثر ہوتا دیکھے گا تو بتدریج پیچھے ہٹنے پر مجبور ہوجائے گا۔

رہبر انقلاب اسلامی نے واضح کیا کہ یہ بات یاد رکھنا چاہیے کہ حالات میں بہتری باہر سے نہیں آئے گی اور بیرونی طاقتوں کے دعووں اور وعدوں پر ہرگز بھروسہ نہیں کیا جا سکتا۔

آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے تین یورپی ملکوں کی تازہ ہرزہ سرائی کی جانب اشارہ کرتے ہوئے فرمایا کہ، خطے کے معاملات میں سب سے زیادہ اور بے جا مداخلت کرنے والے ممالک ایران سے کہہ رہے ہیں کہ خطے میں مداخلت نہ کرے۔ آپ نے فرمایا کہ برطانیہ اور فرانس تباہ کن ایٹمی میزائلوں سے لیس ہیں جبکہ جرمنی بھی اسی راستے پر گامزن ہے لیکن ایران سے کہا جا رہا ہے کہ وہ میزائل نہ بنائے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …