جمعرات , 21 جنوری 2021

وحشی صہیونی فوجیوں کے ہاتھوں 13 سالہ فلسطینی بچہ شہید

قابض صہیونی فوج نے فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے وسطی شہر رام اللہ کے شمال میں المغیر کے مقام پر فائرنگ کر کے ایک 13 سالہ فلسطینی بچے کو شہید کر دیا۔

ذرائع کے مطابق جمعہ کی شام کو قابض فوج نے المغی کے مقام پر 13 سالہ’’ علی ایمن نصر ابو علیا ‘‘ کو براہ راست گولیوں کا نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں ابو علیا شدید زخمی ہوگیا۔ اسے اسپتال لے جایا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔

ہلال احمر فلسطین کے طبی عملے کے مطابق ابو علیا کے پیٹ اور سینے میں کئی گولیاں لگیں جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوگیا تھا۔ اسے شدید زخمی حالت میں فلسطین میڈیکل کمپلیکس منتقل کیا گیا جہاں وہ فوری طور پر دم توڑ گیا۔

خیال رہے کہ اسرائیلی فوج نے المغیر، کفر مالک سے راس التین کی طرف فلسطینیوں نے یہودی کالونیوں کےقیام خلاف ریلی نکالی۔ قابض فوج نےریلی کے شرکاء پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں ابو علیا سمیت کئی فلسطینی زخمی ہوگئے تھے۔

یہ بھی دیکھیں

آیت اللہ العظمی بشیر نجفی کی حرم مطہر امام رضا(ع) پر امریکہ کی جانب سے پابندی عائد کیے جانے کی شدید مذمت

مرجع تقلید جہاں تشیع آیت اللہ العظمی بشیر نجفی نے حرم مطہر حضرت امام رضا …