منگل , 20 اپریل 2021

حکومت کا سینیٹ انتخابات مارچ کی بجائے فروری میں کرانے کا فیصلہ

حکومت نے سینیٹ انتخابات مارچ کے بجائے فروری اور شو آف ہینڈ کے ذریعہ کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

ابلاغ نیوز کی رپورٹ کے مطابق حکومت نے سینیٹ انتخابات مارچ کے بجائے فروری اور شو آف ہینڈ کے ذریعہ کرانے کا فیصلہ کیا ہے۔

اطلاعات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت وفاقی کابینہ کا اجلاس ہوا جس میں سینیٹ الیکشن جلد کرانے سے متعلق مشاورت کی گئی، ذرائع کے مطابق کابینہ اجلاس میں حکومت کی جانب سے سینیٹ انتخابات مارچ کے بجائے فروری میں شو آف ہینڈ کے ذریعے کرانے کا فیصلہ کیا گیا جب کہ اس حوالے سے سپریم کورٹ سے رہنمائی لی جائے گی۔

اسلام آباد میں میڈیا سے گفتگو میں وفاقی وزیراطلاعات شبلی فراز کا کہنا تھا کہ وزیراعظم چاہتے ہیں کہ سینیٹ الیکشن انتہائی صاف شفاف ہوں، سب جانتے ہیں کہ سینیٹ الیکشن میں ہارس ٹریڈنگ کے الزامات لگتے ہیں جب کہ وزیراعظم نے اسی معاملے پر 20 ارکان صوبائی اسمبلیوں کو اپنی ہی پارٹی سے نکال دیا تھا۔

شبلی فراز نے کہا کہ سپریم کورٹ کی ہدایات کی روشنی میں ہم نے ایک بل اسمبلی میں پیش کیا ہے اور آج اجلاس میں اس پر بحث ہوئی کہ ہم اس بل کو کس طرح پاس کراسکتے ہیں، اس بل کو پاس کرانے کے لیے کوئی آئینی ترمیم، ایگزیکٹیو آرڈر یا الیکشن کمیشن کے ذریعے پاس کروایا جائے تاہم ہم نے طے کیا کہ اس معاملے پر سپریم کورٹ سے رہنمائی لی جائے گی۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …