جمعرات , 15 اپریل 2021

ایرانی قوم کی استقامت دشمن کو ہتھیار ڈالنے پر مجبور کرے گی: صدر روحانی

ڈاکٹر حسن روحانی نے آج بروز جمعرات ایرانی وزارت داخلہ کے منصوبوں کے افتتاحی تقریب میں پابندیوں کو توڑنے یا غیر موثر بنانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ جیسا کہ گزشتہ روز ایرانی سپریم لیڈر نے فرمایا اس میں ایک گھنٹہ کے لئے تاخیر نہیں ہونی چاہئے اور حکومت کو پابندیوں کو توڑنے کی پوری کوشش کرنی چاہئے اور حکومت کو ایک گھنٹہ کی تاخیر کی اجازت نہیں ہے۔

یاد رہے کہ حضرت آیت اللہ خامنہ ای نے گزشتہ روز ایرانی عہدیداروں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اگر پابندیاں درست، عقلمند، ایرانی- اسلامی اور باوقار طریقے سے اٹھائی جاسکتی ہیں تو یہ کرنا چاہئے لیکن اصل توجہ ان پابندیوں کو غیر موثر بنانا چاہئے جو آپ کے ہاتھ میں ہیں۔

ایرانی صدر نے کہا کہ کہ ہم کئی سالوں سے معاشی جنگ کی حالت میں ہیں، کہا کہ مجھے خوشی ہے کہ مسلط  کردہ معاشی جنگ اور کورونا کے حالات میں تمام لوگوں اور عہدیداروں کی کوششوں کے ساتھ اس سال میں بہت پروگراموں کا افتتاح کیا گیا ہے اور ہم اسی پروگراموں کو سال کے آخر تک جاری رکھیں گے۔

انہوں نے کہا کہ یہ قومی طاقت ہے جس نے دشمن کو عوام کے حقوق کے سامنے جھکنے پر مجبور کیا ہے مجھے کوئی شک نہیں ہے کہ پوری ایرانی قوم کی بہادری اور مزاحمت اگلی امریکی حکومت کو ایرانی عوام کے سامنے ہتھیار ڈالنے پر مجبور کرے گی۔

روحانی نے کہا کہ یہ مزاحمت انہیں اپنے وعدوں پر واپس جانے پر مجبور کرے گی اور پابندیوں کے خاتمے کا باعث ہوگی البتہ ہمیں پابندیوں کو غیر موثر یا غیر موثر بنانے کی بھی کوشش کرنی چاہئے اور یہ ہمارا پہلا فرض ہے اور ہمیں پابندیوں کو توڑنے کی کوشش کرنی ہوگی۔

انہوں نے اپنے خطاب کے آخر میں ملک میں قومی منصوبوں کے افتتاح کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ 7،950 بلین ٹمنوں کے منصوبوں کا آج افتتاح کیا گیا اور اللہ کے فضل و کرم سے حکومت کے اختتام تک  25 ہزار ارب تومان سرمایا کاری کے ساتھ 180 اور منصوبوں کا افتتاح ہوگا۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …