منگل , 13 اپریل 2021

بوکو حرام نے مزید 35 افراد کو اغوا کرلیا

بوکو حرام نے اپنے ایک تازہ دہشت گردانہ حملے میں پانچ فوجیوں کو ہلاک کرنے کے ساتھ ہی 35 افراد کو اغوا کر لیا ہے۔

مقامی ذرائع نے خبر دی ہے کہ بوکو حرام سے وابستہ دہشت گردوں نے بورنو صوبے میں پانچ سرکاری اہلکاروں کو ہلاک کرنے کے بعد 35 افراد کو اغوا کر لیا ہے۔

ایک ایسے وقت جب نائجیریا کی فوج بوکوحرام کے ہاتھوں اغوا کئے گئے بچوں کی آزادی کے لئے کوشاں ہے، میڈیا نے مزید 35 افراد کے اغوا کی خبر دی ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ دہشت گردوں نے فوجی کانوائے پر آرپی جی سے حملہ کیا جو ایک گاڑی پر آکر لگا جس کے نتیجے میں اس پر سوار پانچ جوان مارے گئے۔ اس حملے میں چند دوسرے سپاہیوں کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔

بورنو میں ہونے والے دہشت گردی کے اس واقعے میں بوکوحرام کے مسلح دہشت گرد 35 افراد کو پکڑ کر اپنے ساتھ لے گئے۔

اقوام متحدہ سے وابستہ امدادی ٹیم کا کہنا ہے حالیہ ایک عشرے کے دوران بوکوحرام سے وابستہ دہشت گرد عناصر کے ہاتھوں اب 30000 افراد مارے جا چکے ہیں جبکہ 30 لاکھ کے قریب لوگوں کو اپنا گھربار چھوڑنا پڑا ہے۔

بوکوحرام کو داعش کا افریقی ورژن سمجھا جاتا ہے کہ جس کو سعودی عرب جیسے ملک اور انتہاپسند تنظیموں کی پشتپناہی حاصل رہی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …