منگل , 13 اپریل 2021

آخرکار پوپ فرانسس کو عراقی، شامی اور یمنی بچوں کی یاد آ ہی گئی

کیتھولک عیسائیوں کے پیشوا پوپ فرانسس نے کہا ہے کہ عراق، شام اور یمن کے جنگ زدہ بچوں کی صورتحال سے انسان کے ضمیر کو اب تو بیدار ہو جانا ہی چاہئے۔

انہوں نے حضرت عیسی (ع) کی ولادت با سعادت اور کرسمس کے موقع عوام کو خطاب کیا۔

انہوں نے اس موقع پر جمعے کے روز کہا کہ جنگ میں سب سے زیادہ نقصان بچوں کو اٹھانا پڑتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس کی واضح مثال عراق، شام اور یمن کے معصوم بچے ہیں جو جنگ کی قربانی بن رہے ہیں۔

کیتھولک عیسائیوں کے پیشوا پوپ فرانسس نے کہا کہ ان معصوم بچوں کی صورتحال سے ہم بڑوں کے ضمیروں کو بیدار ہونا چاہئے۔

انہوں نے پوری دنیا میں جنگ اور جھڑپوں کے خاتمے کی اپیل کی۔ ان کا کہنا تھا کہ ہمیں جنگ زدہ افراد کی مدد کو آگے بڑھنا چاہئے۔

اپنے کرسمس پیغام میں پوپ فرانسس نے کورونا وبا کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ یہ وبا ایسی ہے جو جغرافیائی سرحدوں تک محدود نہیں ہے۔

انہوں نے ایسے ممالک کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جو کورونا وائرس کی ویکسین پر تسلط قائم کرنا چاہتے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ایسا کرنے سے پوری دنیا سے کورونا کے مکمل خاتمے کا منصوبہ کامیاب نہیں ہو پائے گا۔

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …