جمعہ , 23 اپریل 2021

عراقی عوام شہید قاسم سلیمانی سے اس طرح کر رہے ہیں عقیدت کا اظہار

شہید قاسم سلیمانی اور شہید ابو مہدی المہندس کی پہلی برسی کے موقع پر عراقی عوام اپنے ان دو ہر دلعزیز شہداء سے عقیدت کا اظہار کر رہے ہیں۔

آئی آر آئی بی کی رپورٹ کے مطابق عراق کے تقریبا تمام شہروں کی سڑکوں، گلی کوچوں اور اہم مقامات پرعالم اسلام کے عظیم کمانڈروں شہید قاسم سلیمانی اور شہید ابو مہدی المہندس کی بڑی بڑی اور قد آور تصاویر نصب کی گئیں۔ اس کے علاوہ مختلف شہروں میں ان شہداء کی پہلی برسی کے موقع پر خصوصی تعزیتی پروگرام بھی منعقد ہو رہے ہیں۔

ادھر پاکستان کے مختلف علاقوں میں بھی اسلامی جمہوریہ ایران کی سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کی قدس فورس کے کمانڈر شہید جنرل قاسم سلیمانی اور عراق کی عوامی رضاکار فورس الحشدالشعبی کے ڈپٹی کمانڈر ابو مہدی المہندس اور متعدد دیگر شہدا کی برسی کے پروگراموں کا اعلان کیا گیا ہے.

پاکستانی عوام کا کہنا ہے کہ شہید جنرل قاسم سلیمانی، غاصب صیہونی حکومت اور دہشت گرد گروہوں کے مقابلے میں عالم اسلام کے عظیم فاتح ہیں۔

یاد رہے کہ رواں برس تین جنوری کو امریکی دہشتگردوں نے ڈونلڈ ٹرمپ کے براہ راست حکم سے ایران کی قدس بریگیڈ کے کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی کو انکے ساتھیوں کے ہمراہ فضائی حملہ کر کے شہید کر دیا تھا۔ شہید قاسم سلیمانی عراق کی باضابطہ دعوت پر بغداد پہنچے تھے اور وہ حکومت عراق کے مہمان تھے۔

امریکہ کے اس دہشتگردانہ حملے کے جواب میں ایران نے بھی ایک ابتدائی انتقامی کارروائی کرتے ہوئے 8 جنوری کوعراق میں امریکی دہشتگردی کے سب سے بڑے اڈے عین الاسد پر درجن بھر میزائل داغ کر امریکہ کی شان و شوکت کو خاک میں ملا دیا تھا۔ ایران کے اس حملے میں امریکہ کا بڑا جانی و مالی نقصان ہوا تاہم امریکہ نے کئی ہفتے کی خاموشی کے بعد آہستہ آہستہ اور بتدریج اپنے سو سے زائد دہشتگردوں کو صرف دماغی چوٹیں آنے کا اعتراف کرنے میں ہی عافیت سمجھی۔

 

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …