بدھ , 14 اپریل 2021

یمن میں یواے ای اور اسرائیل کی مشترکہ فوجی چھاونی کا انکشاف

اسرائیلی اخبار کا کہنا ہے کہ یمن کے سقطری جزیرے میں اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کی مشترکہ فوجی چھاونی ہے۔

صیہونی میڈیا نے جنوبی یمن میں صیہونی حکومت اور متحدہ عرب امارات کی مشترکہ فوجی چھاونی کی موجودگی کی خبر دی ہے۔

فارس نیوز ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اسرائیلی اخبار ہارٹص نے لکھا ہے کہ جنوبی یمن کے سقطری جزیرے پر اسرا‏ئیل اور متحدہ عرب امارات کی مشترکہ فوجی چھاونی موجود ہے۔

اسرائیل کے اس اخبار کے مقالہ نگار زفی بارئیل نے لکھا ہے کہ متحدہ عرب امارات کے حکام، یمن کے اس جزیرے کے عوام کی زندگی پر پوری طرح مسلط ہیں۔

اس رپورٹ کی بنیاد پر امارات نے اس جزیرے کو یمن کے مقامی باشندوں کے لئے بند کر دیا ہے اور یمنی شہریوں کے لئے کام اور روزگار کے لئے سخت قوانین بنائے ہیں۔

تجزیہ نگاروں کا کہنا ہے کہ متحدہ عرب امارات نے یمن کے جزیرہ سقطری میں مشترکہ فوجی چھاونی، امریکا سے ایف-35 جنگی طیارہ حاصل کرنے کے لئے بنائی ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ متحدہ عرب امارات اور اسرائیل کی مشترکہ فوجی چھاونی میں اسرائیلی بحریہ کے فوجی تعینات ہیں۔

 

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …