بدھ , 23 جون 2021

ایران طاقتور ہے اور خود فیصلہ کرے گا کہ کب اور کیسے انتقام لینا ہے: سید حسن نصر اللہ

حزب اللہ لبنان کے سیکریٹری جنرل نے استقامت کے محاذ کے شہیدوں کی شہادت کی پہلی برسی کے موقع پر تقریر میں کہا ہے کہ ایران بہت طاقتور ہے اور وہ خود یہ فیصلہ کرے گا کہ ان شہیدوں کے انتقام کب اور کیسے لینا ہے۔

سید حسن نصر اللہ نے اتوار کی رات سپاہ پاسداران انقلاب اسلامی کی قدس فورس کے سابق کمانڈر شہید جنرل قاسم سلیمانی اور عراق کی رضاکار فورس الحشد الشعبی کے ڈپٹی کمانڈر شہید ابو مہدی المہندس اور ان کے ساتھویں کی شہادت کی پہلی برسی کے خصوصی پروگرام سے خطاب کیا۔ انہوں نے کہا کہ اقوام، استقامتی تحریکوں، جماعتوں، ملتوں اور خطے کے ملکوں نے شہید سلیمانی اور شہید مہندس سے اپنی وفاداری کا اعلان کیا ہے۔

حزب اللہ لبنان کے سربراہ نے کہا کہ ایران نے لبنانی استقامت اور اس ملک کے اقتدار اعلی کی غیر مشروط حمایت کی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم اس ملک کو جس نے پیسوں اور ہتھیاروں سے ہماری حمایت کی اور اس راہ میں شہید پیش کیے، اس ملک کے برابر نہیں سمجھ سکتے جس نے ہمارے خلاف سازشیں کیں اور صیہونی دشمن کی حمایت کی۔

نصر اللہ نے کہا کہ بعض لوگ یہ کہتے ہیں کہ ایران، انتقام لینے کے لیے اپنے دوستوں کی مدد لے گا، ایران اگر جواب دینا چاہے گا تو وہ فوجی یا سیکورٹی جواب دے گا، ایران کمزور نہیں بلکہ مضبوط ہے اور وہی فیصلہ کرے گا کہ کس طرح اور کب جواب دے۔

سید حسن نصر اللہ نے کہا کہ ایران مضبوط ہے اور جب وہ شہید سلیمانی کے قتل کا جواب دینے کا فیصلہ کر لے گا تو وہ خود عمل کرے گا اور اپنے دوستوں سے نہیں کہے گا کہ وہ شہید قاسم سلیمانی کے قتل کا جواب دیں۔

 

یہ بھی دیکھیں

گورنر سندھ کا وزیراعظم سے آئی جی سندھ کو عہدے سے ہٹانے کا مطالبہ

کراچی: سندھ کے گورنر عمران اسمٰعیل نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کرکے سندھ پولیس …