پیر , 21 جون 2021

پاکستان میں نہیں، امریکا میں تیل کا کاروبار ہے، اعظم سواتی

وفاقی وزیر ریلوے اعظم سواتی نے کہا ہے کہ میرا پاکستان میں کوئی کاروبار نہیں اور امریکا میں تیل کا کاروبار ہے، میں پیسہ وہاں سے لا رہا ہوں اور کبھی پیسہ پاکستان سے لے کر وہاں نہیں گیا۔

کراچی میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر ریلوے اعظم سواتی نے کہا کہ ہماری سفری کوچز کم ہیں، ٹریک ہمارے پاس موجود ہیں لیکن ہم اسے استعمال نہیں کررہے لہٰذا فریٹ اس وقت سالانہ 11ارب روپے دے رہا ہے، میں کوئی جادو کی چھڑی تو استعمال نہیں کررہا لیکن ہم کچھ عرصے میں اسے ڈبل کرتے ہوئے 22ارب تک پہنچائیں گے۔

 

ان کا کہنا تھا کہ اگر ہم اسے ڈبل نہیں کریں گے تو اس کا حشر اسٹیل مل جیسا ہو گا، یہی رولنگ اسٹاک، ویگن، یہی کوچز، یہی لوگ اور انہی اسٹاف کی مدد سے میں فریٹ ڈبل کر کے دکھاؤں گا کیونکہ اگر میں فریٹ نہیں کر سکتا تو ریلوے نہیں چلا سکتا۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے جتنے بھی منصوبے ہیں انہیں ہم 12 یا 13 تاریخ کو گورنر ہاؤس میں شروع کرنے جا رہے ہیں ، ہم پاکستان اور پاکستان سے باہر جتنے بھی ڈیولپر ہیں ان سے کہہ رہے ہیں کہ آئیں، ہماری مدد کریں، 72سال سے یہ زمین کسی نے استعمال نہیں کی، اس سے کوئی آمدن نہیں ہے ، لوگ اس پر قبضہ کررہے ہیں لہٰذا اس گمبھیر نقصان سے ریلوے کو نکالیں۔

اعظم سواتی نے کہا کہ دنیا میں ہر ملک یہی کام کررہا ہے، میں کوئی نئی چیز ایجاد نہیں کررہے ہیں، وہ جیسے ہی تجاویز دیں گے تو ہم پیپرا کے قواعد کو مدنظر رکھ کر فیصلہ کریں گے تاکہ ہمیں کنسلٹنٹ کی خدمات حاصل کرنے میں دیر نہ لگے۔

انہوں نے کہا کہ میں آپ ی مدد سے ریونیو بڑھاؤں گا، ہم ویب سائٹ کو دوسرے رخ پر لے کر جا رہے ہیں اور میڈیا سے ان پر اور ان کے افسران پر نظر رکھنے کی درخواست کرتے ہوئے کہا کہ ہمارا قبلہ درست کرنا آپ کا کام ہے۔

وزیر ریلوے نے وضاحت کی کہ میرا پاکستان میں کاروبار نہیں اور امریکا میں تیل کا کاروبار ہے، میں پیسہ وہاں سے لا رہا ہوں اور کبھی پیسہ یہاں سے وہاں نہیں گیا۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ میں نے ایک آدمی کو اس کی نااہلی کی وجہ سے معطل کیا ہے اور کسی کو بحال نہیں کیا، اس آدمی سے انکوائری ہو گی اور طریقہ کار کے تحت پوچھا جائے گا کہ وجہ کیا تھی۔

انہوں نے کہا کہ ہماری مفاد مسافر اور فریٹ ہے جس کو ہم نے تباہ کر کے رکھ دیا ہے، انگریز جو ہمارے ملک کی ریلوے کا ڈھانچہ بنا کر گیا تھا اب اس میں ہمیں اوسطاً 40ارب کا خسارہ ہو رہا ہے تو آپ مسافر یا فریٹ میں کلائٹس کیسے بنائیں گے۔

 

یہ بھی دیکھیں

گورنر سندھ کا وزیراعظم سے آئی جی سندھ کو عہدے سے ہٹانے کا مطالبہ

کراچی: سندھ کے گورنر عمران اسمٰعیل نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کرکے سندھ پولیس …