جمعرات , 15 اپریل 2021

کابل میں دو خاتون ماہرینِ قانون کا قتل

کابل میں مسلح افراد کی فائرنگ میں دو خاتون ماہرین قانون جانبحق ہوگئيں۔

غیر ملکی ذرائع ابلاغ کے مطابق واقعہ دارالحکومت کابل میں پیش آیا جہاں سپریم کورٹ کی دو خواتین ججوں کی گاڑی پر مسلح افراد نے فائرنگ کی۔

مسلح حملے کے نتیجے میں دونوں خواتین موقع پر ہی جاں بحق ہوگئیں جن کی لاشیں اسپتال منتقل کر دی گئی ہیں۔

اٹارنی جنرل دفتر کے ترجمان نے بتایا کہ دونوں خواتین جج گھر سے کام پر جا رہی تھیں۔ راستے میں کچھ مسلح افراد نے ان کی گاڑی پر حملہ کر دیا۔

واضح رہے کہ حالیہ دنوں میں افغانستان میں دہشت گردی اور بد امنی کے واقعات میں شدت آ گئی ہے اور روزانہ کی بنیادوں پر ملک کے مختلف علاقوں میں فائرنگ، بم دھماکوں یا راکٹ حملوں کے واقعات رونما ہوتے ہیں۔

جنگ بندی کے لئے طالبان کے ساتھ افغان حکومت کے جاری مذاکرات اب تک ناکام رہے ہیں اور کئی مہینے گزر جانے کے بعد بھی ان کا کوئی نتیجہ برآمد نہیں ہوا ہے۔

 

یہ بھی دیکھیں

ایران و چین معاہدے پر امریکہ چراغ پا

امریکی صدر نے ایران اور چین کے 25 سالہ معاہدے پر سخت تشویش کا اظہار …