ہفتہ , 18 ستمبر 2021

امریکی ویکسین کے سائیڈ افیکٹس

اسپوتنک کی رپورٹ کے مطابق امریکی حکومت نے فائزر یا موڈرنا کی کورونا ویکسین لگوانے والے چند افراد میں دل بڑھنے کی شکایت ملنے کے بعد ان کمپنیوں کی ویکسین لینے والے سبھی لوگوں سے دل سے متعلق علامات پر نگاہ رکھنے کے لئے انتباہ جاری کیا ہے ۔

امراض کنٹرول اور روک تھام کے مراکز نے ایک بیان میں کہا ہے کہ کورونا ویکسین لینے والوں سے سینے میں درد ، سانس لینے میں تکلیف ، تیز دھڑکن ، گھبراہٹ جیسی علامات میں سے کوئی بھی نظر آنے پر طبی مشورہ لینے کو کہا گیا ہے ۔

واضح رہے کہ کورونا وائرس کے کیسز اور اس سے اموات کے اعتبار سے 10 سرِ فہرست ممالک میں 33 کروڑ سے زائد آبادی کا حامل ملک امریکہ تا حال پہلے نمبر پر ہے جہاں اس وائرس سے اب تک 6 لاکھ 17 ہزار 875 افراد موت کے منہ میں پہنچ چکے ہیں جبکہ اس سے بیمار ہونے والوں کی مجموعی تعداد 3 کروڑ 44 لاکھ 34 ہزار 803 ہو چکی ہے۔

کورونا وائرس کے امریکہ میں 49 لاکھ 99 ہزار 794 مریض اسپتالوں، قرنطینہ مراکز میں زیرِ علاج اور گھروں میں آئسولیشن میں ہیں، جن میں سے 3 ہزار 916 کی حالت تشویش ناک ہے ۔

یہ بھی دیکھیں

ویکسینیشن کے بعد کیا کورونا پر قابو پایا جا سکے گا ؟

ویکسینیشن کے بعد بھی کورونا وائرس کے پھیلاؤ کا سلسلہ جاری رہنے کا امکان ہے۔ …