ہفتہ , 27 فروری 2021

چین: 60 گھنٹے بعد ملبے سے ایک شخص زندہ نکالا گيا

9

چین کے جنوبی شہر شینزین میں لینڈ سلائیڈنگ کے واقعے کے 60 گھنٹے بعد ایک شخص کو ملبے کے نیچے سے زندہ نکالا گیا ہے۔
چین کی سرکاری میڈیا کا کہنا ہے کہ اتوار کو ہونے والے اس واقعے میں کم از کم ایک شخص ہلاک ہوا ہے جبکہ 70 افراد ابھی بھی لا پتہ ہیں۔

خیال رہے کہ صنعتی شہر شینزین میں لینڈ سلائیڈنگ کی زد میں کم از کم 30 عمارتیں آ گئی تھیں۔

لینڈ سلائیڈنگ کا واقعہ اس وقت پیش آیا جب لوگوں کا بنایا ہوا مٹی کا ایک بہت بڑا تودہ اچانک گر گیا تھا۔

مٹی کا یہ تودہ ایک مقامی پہاڑی کے ساتھ زیر تعمیر عمارتوں کے تعمیراتی سامان کے ملبے پر مشتمل تھا جو شدید بارشوں کے نتیجے میں اچانک نیچے جا گرا۔

10

امدادی کاموں میں ہزاروں افراد شامل ہیں۔

خبر رساں ادارے شن ہوا نے بتایا کہ ملبے کے نیچے سے ایک 19 سالہ نوجوان کو بدھ کے روز مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے تین بجے ایک منہدم عمارت سے نکالا گيا۔ اب اسے طبی امداد فراہم کی جا رہی ہے۔

اتوار کے روز مٹی کا تودہ ضلعے بھر میں گرنے اور اس کے باعث قدرتی گیس کی پائپ لائن پر ہونے والے دھماکے کے بعد تقریباً 900 افراد کو علاقے سے نکال لیا گیا ہے۔

لینڈ سلائیڈنگ کے نتیجے میں تقریباً تین لاکھ 80 ہزار مربع میٹر علاقہ مٹی تلے دب گیا ہے، جو فٹبال کے تقریباً 50 میدانوں کے برابر ہے۔ جبکہ کچھ حصوں پر مٹی کی اونچائی 32 فٹ تک ہے۔

پیر کے روز بغیر کوئی وجہ بتائے گم شدہ افراد کی تعداد 91 سے کم کر کے 85 کر دی گئی تھی۔

11

چین کی زمین اور وسائل کی وزارت کاکہنا ہے کہ گذشتہ دو سالوں سے مقامی پہاڑی کے ساتھ تعمیراتی سامان کا کوڑا ڈھیر کیا جا رہا تھا۔

ایک سال میں چین میں پیش آنے والا یہ چوتھا بڑا حادثہ ہے۔ پہلا حادثہ 2015 کے پہلے دن کی شام شنگھائی میں پیش آیا جب نئے سال کی تقریبات کے موقع پر بھگدڑ مچ گئی تھی۔

اس واقعے کے بعد یانگ ٹی دریا میں بحری جہاز ڈوبنے کا واقعہ پیش آیا تھا۔ جبکہ اس کے بعد تیان جن میں کیمیکل کے گودام میں لگنے والی آگ سے 170 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

یہ بھی دیکھیں

شام پر حملہ کرنے والے اسرائیلی میزائل تباہ

شامی فوج نے صوبہ حماہ کی فضا میں اسرائیل کے میزائلی حملوں کو ناکام بنا …