جمعرات , 19 ستمبر 2019

شمالی کوریا نے روس کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھا دیا

news-1471358881-5301_large

پیانگ یانگ (مانٹیرنگ ڈیسک)ماسکو، پیانگ یانگ: شمالی کوریا نے روس کی طرف دوستی کا ہاتھ بڑھا دیا، جاپان کے خلاف فتح کا سالانہ جشن مشترکہ طور پر منانے کی دعوت ‘شمالی کوریا کے سپریم لیڈر کم جونگ ان نے روسی صدر پیوٹن کو خط لکھ دیا۔ تفصیلات کے مطابق متبادل فوج بنانے کے لئے شمالی کوریا کے سپریم لیڈر کم جونگ ان نے روسی صدر ولادی میر پیوٹن کو خط لکھا ہے، خط میں جنگ عظیم دوم کے خاتمے کے بعد جاپان پر دونوں ممالک کی مشترکہ فتح کو مل کر منانے کی دعوت دی ہے، کم جونگ ان نے اس کو ’’دوستانہ مبارکباد‘‘ کا نام دیا ہے۔سویت یونین کے عروج کے دور میں دونوں ممالک نے کمیونسٹ فروغ کے لئے اشتراک کیا، ایک بار پھر دونوں اشتراکی دور کی جانب واپس لوٹ رہے ہیں، سویت یونین کا شیرازہ بکھرتے ہی دونوں ممالک کے درمیان تعلقات ختم ہو گئے تھے، روسی اخبار نے پیوٹن کو مرد آہن قرار دیتے ہوئے لکھا ہے کہ روس کا شمالی کوریا کی جانب دوستی کا ہاتھ مغربی طاقتوں کے ذہن میں کھٹک رہا ہے۔ یاد رہے کہ 2015ء میں پیوٹن نے کم کو روس کی سالانہ فوجی پریڈ میں بلایا تھا جو کسی وجہ سے شریک نہ ہو سکے تھے، اب کم اپنے ملک کے خلاف بڑھتی ہوئی کشیدگی کے خلاف روس سے دوستی کی بولی لگا رہا ہے۔ پیون یانگ کی سرکاری ایجنسی کی طرف سے کم جونگ ان کے شائع ایک بیان میں لکھا ہے کہ "میں ڈی پی آر کے کے درمیان دوستی اور تعاون کے تعلقات (کوریا کے ڈیموکریٹک پیپلز جمہوریہ ) اور روس مشترکہ دشمن کے خلاف جدوجہد کر کے ہمیشہ میں ترقی کرے گا، اس یقین کا اظہار تمنا اور دونوں ممالک کے عوام کی خواہش کے ساتھ ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ماسکو , واشنگٹن کے غیرذمہ دارانہ اقدامات کا جواب دینے پر مجبور ہے:روسی نائب وزیر خارجہ

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک)روس کے نائب وزیرخارجہ نے امریکہ کے غیرذمہ دارانہ اقدام کو دنیا میں ایٹمی …