جمعرات , 19 ستمبر 2019

داعش اسلام سے بے خبر ہے؟

jihadijohn1

لندن(مانٹیرنگ ڈیسک )Businessinsider [1] نے لکھا ہے کہ دہشتگرد گروہ داعش کے چند ثبوت حال ہی میں ملے ہیں ان سے پتہ چلتا ہے کہ اکثر وہ لوگ جو داعش میں شامل ہوتے ہیں انہیں اسلام کے متعلق کچھ زیادہ علم نہیں ہوتا۔ان ثبوتوں کی بنیاد پر معلوم ہوا ہے کہ داعش کے 70 فیصد دہشتگرد اسلام کی انتہائی سطحی اور ابتدائی معلومات رکھتے ہیں۔24 فیصد کو گمان ہے کہ وہ اسلام کے متعلق کچھ جانتے ہیں اور صرف 5 فیصد اسلامی قوانین اور احکام جانتے ہیں۔ان ثبوتوں سے پتہ چلتا ہے کہ جو لوگ اسلام کی سطحی اور ابتدائی معلومات رکھتے ہیں وہ جلد فریب کھا جاتے ہیں اور داعش میں شامل ہوجاتے ہیں۔اور جو لوگ اسلام کا حقیقی چہرہ سمجھتے ہیں اور اسلام کی کافی معلومات رکھتے ہیں وہ جانتے ہیں کہ داعش جو اسلام پیش کررہی ہے وہ حقیقی اسلام نہیں ہے۔اکثر افراد ہیجان اور جنگ اور خونریزی کا شوق رکھنے کی وجہ سے داعش میں شمولیت اختیار کرتے ہیں۔ان لوگوں کو اسلام کی ذرہ برابر بھی شناخت نہیں اور اسکی انہیں فکر بھی نہیں ہوتی۔ان میں سے اکثر افراد اسلام کی انتہائی کم معلومات رکھنے کی وجہ سے داعش میں شامل ہوتے ہیں اور انکی تعلیمات کے زیراثر خود کو شہادت کیلئے آمادہ کرتے ہیں۔انہی میں سے اکثر افراد کو خودکش حملوں کیلئے منتخب کیا جاتا ہے جبکہ داعش کے وہ دہشتگرد جنہیں اسلام کی بہتر معلومات ہوتی ہیں وہ بہت کم خود کش حملوں کیلئے آمادگی کا اظہار کرتے ہیں۔آکسفورڈ یونیورسٹی کے ایک مسلمان پروفیسر کا کہنا تھا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ ان خودکش حملوں کی وجہ سے انہیں شہادت ملتی ہے جبکہ وہ شہید نہیں ہوتے بلکہ وہ ظالم ہیں اور یہ ایسے خون آشام درندے ہیں جو بے گناہ معصوم عوام کو قتل کرتے ہیں۔یہ اسلام ہرگز نہیں ہے اور اسلام کسی بھی بے گناہ افراد کے قتل کو جائز قرار نہیں دیتا۔

یہ بھی دیکھیں

رابرٹ اوبرائن امریکہ کے قومی سلامتی کے مشیر نامزد

واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک)امریکا کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے یرغمالیوں کے حوالے سے مذاکرات کار رابرٹ …