منگل , 12 دسمبر 2017

انسانیت سے محبت کا دن، کشمیری آج بھی بنیادی انسانی حقوق سے محروم

سرینگر (مانٹیرنگ ڈیسک ) آج دنیا بھر میں انسانیت سے محبت کا عالمی دن منایا جارہا ہے لیکن دوسری جانب اکھنڈ بھارت جنت نظیر وادی کو جہنم میں بدلنے پر تل گیا ہے۔ لیکن وادی میں صبح شام آزادی کے نعروں کی گونج بلند ہوتی جا رہی ہے۔کشمیر اس وقت مودی سرکار کے ظلم وستم کی بھیانک داستان بنا ہوا ہے۔مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق زندہ درگور،میڈیا پر پابندی، اسپتالوں اور مساجد پر پہرے، راشن اور ادویات کی شدید قلت لیکن ہر گھر میں برہان وانی کےلہو سے روشن ہونے والے چراغ آزادی کی کرنیں بکھیر رہے ہیں۔ قابض فوج نے ایمبولینس کو بھی نہ بخشا، فائرنگ کرکے ڈرائیور کو شہید کر دیا۔ وادی میں آج بھی بدستور کرفیو ہے اور مظلوم کشمیریوں کو نماز جمعہ کی ادائیگی سے بھی روک دیا گیا۔ حریت کانفرنس نے دلی سرکار کی خلاف احتجاجی تحریک میں 25 اگست تک توسیع کر دی ہے۔ سید علی گیلانی کا کہنا ہے کہ قابض فوج نے وادی میں جنگ کی صورتحال پیدا کر دی ہے۔ مظلوم کشمیریوں کے دلوں میں جاگنے والی آزادی کی یہ خواہش اب دبنے والی نہیں ظلم کی اندھیری رات ختم ہونے کو ہے۔ آزادی کا سورج بہت جلد بلند و بالا پہاڑوں پر کرنیں بکھیرے گا۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج عالمی آزادی صحافت کا دن منایا جا رہا ہے

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک ) ہرسال 3 مئی کو آزادی صحافت کا عالمی دن منایا جاتا ...