پیر , 1 مارچ 2021

ایک شام نائیجیریا کے مظلوموں کے نام

ہندوستان کی ریاست اترپردیش کے دار الحکومت لکھنؤ میں نائیجیریا کے مظلوم مسلمانوں کی حمایت میں ” ایک شام نائیجیریا کے مسلمانوں کے نام ” کے زیر عنوان ایک پروگرام کا انعقاد کیا گیا-
لکھنؤ کے تاریخی چھوٹے امامبارگاہ میں منعقدہ اس پروگرام میں ہندوستان کے اہم شیعہ مذہبی رہنما اور امام جمعہ لکھنؤ مولانا کلب جواد نقوی نے نائیجیریا کی فوج کے ہاتھوں مارے گئے ایک ہزار سے زیادہ شیعہ مسلمانوں کی نسل کشی کی شدید الفاظ میں تنقید کی- مولانا کلب جواد نے کہا کہ نائیجریا میں ہوئی شیعہ مسلمانوں کی نسل کشی کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے- انھوں نے کہا کہ آیت اللہ شیخ ابراہیم زکزکی کس حالت میں ہیں یہ ابھی تک واضح نہیں ہے اور نہ ہی نائیجیریا کی فوج کوئی واضح معلومات فراہم کر رہی ہے-لکھنئو کے امام جمعہ نے ” ایک شام نائیجیریا کے مظلوموں کے نام ” پروگرام میں شامل ہزاروں افراد سے خطاب کرتے ہوئے سوال کیا کہ اب دنیا بھر کا میڈیا کہاں ہے؟ انھوں نے کہا کہ امریکہ سمیت مغربی ممالک میں ایک بھی شخص کی موت ہوتی ہے تو پوری دنیا کے ذرائع ابلاغ چیخنے لگتے ہیں لیکن نائیجیریا میں ایک ہزار سے زیادہ مسلمانوں کی نسل کشی ہو گئی لیکن ذرائع ابلاغ پوری طرح خاموشی اختیار کئے ہوئے ہیں- ہندوستان کے معروف شیعہ مذہبی رہنما مولانا کلب جواد نقوی نے ہندوستانی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ نائیجیریا کی حکومت سے بات کر کے آیت اللہ زکزکی کی رہائی کے لئے دباو ڈالے

یہ بھی دیکھیں

شام پر حملہ کرنے والے اسرائیلی میزائل تباہ

شامی فوج نے صوبہ حماہ کی فضا میں اسرائیل کے میزائلی حملوں کو ناکام بنا …