ہفتہ , 6 مارچ 2021

جماعت علمائے اہل سنت عراق کی جانب سے شیعہ مراجع کرام کی قدردانی

عراق میں جماعت علمائے اہل سنت کے سربراہ خالد الملا نے دہشت گرد گروہ داعش کے مقابلے میں عراق کے اہل سنت باشندوں کی حمایت کرنے پر مراجع کرام کو سراہا ہے۔

6e25c9cd87d457a89f7ee2c6332e4ca6 (1)

جماعت علمائے اہل سنت عراق کے سربراہ خالد الملا نے ہفتہ وحدت کی مناسبت سے لبنان کے ٹیلی ویژن چینل المیادین سے گفتگو میں کہاکہ عراق کے شیعہ مراجع کرام نے ملک میں شیعہ مسلمانوں کے وسیع پیمانے پر ہوئے قتل عام اور مقامات مقدسہ خاص طور پر سامرا میں حرم مطہرپر دہشت گردانہ حملوں کے باوجود کبھی بھی جہاد کا فتوی نہیں دیا – انہوں نے کہا کہ شیعہ مراجع کرام نے اسی وقت جہاد کا فتوی دیا جب عراق کے سنی آبادی والے شہر موصل پر دہشت گردوں نے حملہ کیا – عراق کے ممتاز عالم اہل سنت نے کہاکہ عراق میں پانچ لاکھ سے زیادہ شیعہ مسلمانوں کے قتل عام اور شیعہ مسلمانوں کے مقدس مقامات مساجد اور امام بارگاہوں پر بے شمار حملوں کے باوجود شیعہ مراجع کرام نے ہمیشہ مسلمانوں میں اتحاد پر زور دیا اور فتنے اور سازش کی مخالفت کی – صوبہ الانبارکے دلیم قبیلےکے سربراہ شیخ محمد الھایس نے بھی اس بارے میں کہا کہ شیعہ مسلمانوں نے ہمیشہ تمام مشکلات خود برداشت کی ہیں اور شیعہ نوجوان ہی اپنے محفوظ علاقوں سے داعش کے زیرقبضہ غیر محفوظ علاقوں میں دہشت گردوں سے جنگ کے لئے بھیجے گئے ہیں- عراق کے ایک اور اہل سنت عالم دین نے عراق میں شیعہ اور سنی مسلمانوں کے درمیان اختلاف اور تفرقہ انگیزاقدامات کو مغربی ملکوں اور صیہونی حکومت کی خفیہ تنظیموں کی کارستانی قراردیا ہے.

یہ بھی دیکھیں

شام پر حملہ کرنے والے اسرائیلی میزائل تباہ

شامی فوج نے صوبہ حماہ کی فضا میں اسرائیل کے میزائلی حملوں کو ناکام بنا …