منگل , 12 دسمبر 2017

صابرہ اور شتیلا کے مہاجر کیمپوں میں خون کی ہولی کھیلی گئی

sabrashatilamemorial

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک )آج کے دن 1982 میں جیسے ہی اسرائیلی فوج مغربی بیروت میں داخل ہوئی، فلینجسٹ عیسائی ملیشیا کے لوگوں نے صابرہ اور شتیلا کے مہاجر کیمپوں میں فلسطینیوں کا خون بہانا شروع کر دیا۔ فلینجسٹ اپنے ایک لیڈر کی موت کی وجہ سے فلسطینیوں کے خلاف غصے سے بھرے بیٹھے تھے۔ اس کے باوجود اسرائیلی کمانڈروں نے فلینجسٹوں کو مہاجر کیمپوں میں دہشت گردوں کی تلاش کا کام دے دیا۔ اس پردے میں انہیں اپنا غصہ نکالنے کا موقعہ مل گیا۔ اسرائیل نے اس خون ریزی کی مذمت کی اور ساتھ ہی اس سلسلے میں کوئی ذمہ داری قبول کرنے سے انکار کر دیا۔ 29 ستمبر کو مزید خونریزی سے بچنے کے لئے اقوام متحدہ نے لبنان میں امن فوج متعین کر دی۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج عالمی آزادی صحافت کا دن منایا جا رہا ہے

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک ) ہرسال 3 مئی کو آزادی صحافت کا عالمی دن منایا جاتا ...