اتوار , 28 فروری 2021

ذیابیطس کا خطرہ بن جانے والا سب سے بڑا سبب

یہ بات نیدرلینڈ میں ہونے والی ایک نئی طبی تحقیق میں سامنے آئی— کریٹیو کامنز فوٹو

یہ بات نیدرلینڈ میں ہونے والی ایک نئی طبی تحقیق میں سامنے آئی— کریٹیو کامنز فوٹو

اگر تو آپ اکثر کئی کئی گھنٹے بیٹھ کر گزار دیتے ہیں تو ذیابیطس کی تشخیص ہونے پر آپ کو حیرت نہیں ہونی چاہئے۔

یہ بات نیدرلینڈ میں ہونے والی ایک نئی طبی تحقیق میں سامنے آئی۔

ماسٹریچٹ یونیورسٹی کی تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ ہر وہ گھنٹہ جو بیٹھ کر گزارا جائے ذیابیطس ٹائپ ٹو کا خطرہ 22 فیصد تک بڑھا دیتا ہے۔

اس تحقیق کے دوران ڈھائی ہزار کے لے لگ بھگ خواتین کا 8 روز تک جائزہ لیا گیا۔

نتائج سے معلوم ہوا کہ جن لوگوں نے اپنا زیادہ وقت بیٹھ کر گزارا ان میں اس مرض کا خطرہ بڑھ گیا۔

محققین کا کہنا ہے کہ اس حوالے سے ذیابیطس کے مریضوں پر تحقیق کرکے ہمارے نتائج کی تصدیق کی جاسکے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ نتائج سے معلوم ہوتا ہے کہ سست طرز زندگی ذیابیطس ٹائپ ٹو کے شکار ہونے یا اس کی روک تھام کے حوالے سے اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

یہ تحقیق طبی جریدے جرنل آف دی یورپی ایسوسی ایشن فار دی اسٹڈی آف ڈائیبیٹس میں شائع ہوئی۔

خیال رہے کہ سست طرز زندگی کو امراض قلب، بلڈ پریشر اور دیگر متعدد امراض کی جڑ بھی سمجھا جاتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

بیماری میں حتیٰ الامکان دوا سے پرہیز کیجئے!

اسلامی متون میں بکثرت ایسی احادیث اور روایات موجود ہیں جن میں یہ ہدایت کی …