منگل , 9 مارچ 2021

حکومت کی معاشی پالیسیاں خطرناک ہیں، ڈیزل پر 98 فیصد ٹیکس لیا جارہا ہے:عمران خان

a-world-for-imran-khan-1438405467-9432-700x300

 

اسلام آباد:  پاکستان تحریک انصاف کے چئیرمین عمران خان کا کہنا ہے کہ حکومت کی معاشی پالیسیاں خطرناک ہیں پی آئی ا کی نجکاری کا معاملہ پارلیمنٹ میں لایا جائے۔کراچی روانگی سے قبل بنی گالہ اسالام آباد میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے چیرمین تحریک انصاف نے کہا کہ حکومت کی پالیسی خوفناک ہے، دنیا بھر کی فلاحی حکومتیں امیروں سے ٹیکس لے کرعوام پرخرچ کرتی ہے لیکن پاکستابن میں غریبوں پر ٹیکس کا بوجھ ڈالا جارہا ہے اور امیروں کو چھوٹ دی جارہی ہے۔ ڈیزل پر 98 فیصد ٹیکس لیا جارہا ہے۔ 200 ارب روپے کے قرضے سے اورنج لائن بنائی جارہی ہے۔عمران خان کا کہنا تھا کہ نجکاری ہر مسئلے کا حل نہیں، اس سے صرف انتظامیہ بدلے گی، کسی بھی ادارے کی نجکاری سے پہلے عوامی فورم پر اس سلسلے میں مشاورت ہونی چاہیے، اپوزیشن کا کام ہے کہ حکومت سے سوال کرے، پی آئی اے کی نجکاری کا معاملہ پارلیمنٹ میں زیر بحث ہی نہیں لایا گیا۔ یہ بتایاجائیکہ پی آئی ایکی نجکاری کی ضرورت کیوں پیش آرہی ہے،پی آئی اے کے ملازمین پر گولیاں چلائی گئیں جس پر افسوس ہوا۔پاک چین اقتصادی راہداری کے بارے میں عمران خان نے کہا کہ حکومت نے اس اہم منصوبے پرچھوٹے صوبوں کو اعتماد میں نہ لے کر متنازع کردیا ہے۔اس سلسلے میں وہ اتوار کو اپنی جماعت کے لائحہ عمل کا اعلان کریں گے۔

یہ بھی دیکھیں

فلسطین کی آزادی اور اسرائیل کا خاتمہ، پاکستانی قوم کی خواہش

حماس کے رہنما اسمٰعیل ہنیہ نے کہا ہے کہ پاکستان نے ہمیشہ فلسطین کی حمایت …