پیر , 1 مارچ 2021

باجوڑ: پولیو ویکسین بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے خاتمے سے مشروط

وفاق کے زیر انتظام قبائلی علاقے باجوڑ ایجنسی میں بجلی کی لوڈ شیڈنگ کے خلاف مظاہرے کرنے والوں نے لوڈ شیڈنگ کے خاتمے تک بچوں کو پولیو ویکسین پلانے سے انکار کر دیا ہے۔

4

اتوار کو باجوڑ ایجنسی کے ہیڈ کوارٹر خار میں ہونے والے مظاہرے میں درجنوں افراد شریک تھے۔مقامی افراد کا کہنا ہے کہ خار میں روزانہ 17 سے 20 گھنٹے تک بجلی بند رہتی ہے اور بجلی کے بحران سے کاروبار متاثر ہو رہا ہے۔
مقامی صحافی نے بتایا کہ سات لاکھ آبادی پر مشتمل خار اور اس کے گردونواح میں صرف رات میں کسی پہر بجلی آتی ہے اور باقی سارا وقت غیر اعلانیہ طور پر بجلی بند رہتی ہےِ۔
انھوں نے بتایا کہ پولیٹیکل انتظامیہ بجلی کے میٹر لگوانے پر زور دی رہی ہے لیکن عوام بجلی کے میٹر نہیں لگوانا چاہتی کیونکہ حکومت اور باجوڑ قبائل کے درمیان یہ معاہدہ طے پایا تھا افیون کی کاشت بند کرنے پر انھیں مفت بجلی دی جائے گی۔
مظاہرین کا کہنا تھا کہ حکومت اپنے اس معاہدے کے خلاف ورزی کرتے ہوئے لوگوں کو بجلی کے میٹر لگانے پر مجبور کررہی ہے۔
اسسٹنٹ پولیٹیکل ایجنٹ محمد علی کی جانب سے مظاہرین کو پیر تک مسئلہ حل کروانے کی یقین دہانی کے بعد مظاہرین پر امن طور پر منتشر ہو گئے۔
خیال رہے کہ کچھ عرصہ قبل ضلع ملاکنڈ کے علاقے میں بھی لوگوں نے پولیو کے قطرے پلانے کو سڑک کے تعمیر سے مشروط کئے تھے۔

یہ بھی دیکھیں

فلسطین کی آزادی اور اسرائیل کا خاتمہ، پاکستانی قوم کی خواہش

حماس کے رہنما اسمٰعیل ہنیہ نے کہا ہے کہ پاکستان نے ہمیشہ فلسطین کی حمایت …