پیر , 8 مارچ 2021

ہندوستانی بحریہ کا پاکستانی کشتی پر زبردستی قبضہ

ہندوستانی بحریہ نے سمندری حدود کی خلاف ورزی کرتے ہوئے کجھور کریک کے قریب پاکستانی علاقے میں داخل ہوکر 11 ماہی گیروں سمیت پاکستانی کشتی زبردستی اپنے قبضے میں لے لی۔

واضح رہے کہ کجھور کریک صوبہ سندھ کے ساحلی ضلع سجاول کے ساتھ واقع ہے۔

یوسف کتیار گاؤں کے رہائشیوں نے بتایا کہ دلبر کتیار نامی شخص کی الشہباز بوٹ کجھور کریک میں موجود تھی کہ اسی دوران ہندوستانی بحریہ کی بھاری نفری نے اسے اپنے قبضے میں لے لیا۔

رہائشیوں نے بتایا کہ ہندوستانی بحریہ کے اہلکار کشتی کے علاوہ پاکستانی ماہی گیروں کو بھی اپنے ہمراہ لے گئے، جن میں تین بچے بھی شامل ہیں۔ ماہی گیروں کی شناخت 10 سالہ جمیل، 12 سالہ عبد الرزاق، 13 سالہ محمد صدیق، علی محمد، علی اصغر، عبد العزیز، عبد الغفور، ابوبکر، محمد، سکندر اور محمد مرغر کے ناموں سے ہوئی۔

یہ بھی دیکھیں

فلسطین کی آزادی اور اسرائیل کا خاتمہ، پاکستانی قوم کی خواہش

حماس کے رہنما اسمٰعیل ہنیہ نے کہا ہے کہ پاکستان نے ہمیشہ فلسطین کی حمایت …