پیر , 1 مارچ 2021

ترکی شام میں بڑے پیمانے پر فوجی مداخلت کرنے کی ہمت نہیں کرے گا

330700

روسی مستشرق ولادی میر یوسیئیو کا خیال ہے کہ ترکی شام میں بڑے پیمانے پر فوجی مداخلت کرنے کی ہمت نہیں کرے گا۔

ان کے مطابق ترک اس طرح زمینی کارروائی کے لئے زمین ہموار کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔ ترکی کے لئے بہترین آپشن یہ ہے کہ سب کچھ امریکیوں پر ڈال دیا جائے لیکن امریکی اس میں حصہ نہیں لینا چاہتے پھر ترکی کو خیال آیا کیوں نا سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کو اس میں شامل کیا جائے۔ ولادی میر یوسیئیو نے کہا ہے کہ سعودی فوجیں یمن میں پھنسی ہوئی ہیں اس لئے وہ زمینی آپریشن کے لئے بہت کم فوجی دے سکیں گی۔ زیادہ امکان ہے کہ فضایئہ استعمال دیکھتا کی جائے۔ تاہم حمیمیم فضائی اڈے پر موجود روسی بیارہ شکن کمپلکس ایس 400 دشمن کا مقابلہ کر سکتے ہیں۔ ان حالات میں ترکی، سعودی عرب یا متحدہ عرب امارات فضائی سرگرمی نہیں کر سکتے۔ بغیر فضائی مدد کے کوئی بھی حملہ ناکام رہے گا۔ روسی ماہرکو یقین ہے کہ ترک اس بات کو اچھی طرح سمجھتے ہیں اس لیے وہ اس طرح کا فیصلہ کرنے کو طول دے رہے ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

شام پر حملہ کرنے والے اسرائیلی میزائل تباہ

شامی فوج نے صوبہ حماہ کی فضا میں اسرائیل کے میزائلی حملوں کو ناکام بنا …