ہفتہ , 27 فروری 2021

نیمار کے تقریباً پانچ کروڑ ڈالر مالیت کے اثاثے منجمد

14

برازیل میں حکام نے قومی فٹبال ٹیم کے رکن اور ہسپانوی کلب بارسلونا کے لیے کھیلنے والے فٹبالر نیمار کے تقریباً پانچ کروڑ ڈالر مالیت کے اثاثے منجمد کر دیے ہیں۔
ان اثاثوں میں ایک لگژری کشتی، ایک طیارہ اور کئی عمارات شامل ہیں۔
برازیلی حکام نے نیمار پر یہ الزام لگایا ہے کہ انھوں نے ٹیکس بچانے کے لیے کئی فرضی کمپنیوں کا استعمال کیا تاہم نیمار اور ان کے اہلِ خانہ کا کہنا ہے کہ انھوں نے کوئی دھوکہ دہی نہیں کی۔
برازیل کے ذرائع ابلاغ کے مطابق ساؤ پاؤلو کی وفاقی عدالت نے اثاثوں کے انجماد کے فیصلے کے خلاف نیمار کی جانب سے دائر کی گئی اپیل گذشتہ ہفتے مسترد کر دی تھی جس کے بعد پیر سے حکام نے اثاثے منجمد کرنے کے لیے وارنٹس کا اجرا شروع کیا۔
برازیل کی وفاقی ٹیکس ایجنسی کے آڈیٹر آئیگارو جونگ مارٹنز نے خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کو بتایا کہ ’وہ اس فیصلے کے خلاف بھی اپیل کر سکتے ہیں لیکن یہ آگے کی جانب ایک قدم ہے۔‘
گذشتہ برس نیمار اور ان کے اہلِ خانہ اور ان کے کاروبار پر تقریباً ایک کروڑ 60 لاکھ امریکی ڈالر کے مساوی ٹیکس چوری کا الزام ثابت ہوا تھا۔
استغاثہ کے مطابق یہ رقم 2011 سے 2013 کے دوران بچائی گئی جب نیمار برازیلی کلب سینٹوس کے لیے کھیل رہے تھے۔

15

نیمار اور ان کے اہلِ خانہ اور ان کے کاروبار پر تقریباً ایک کروڑ 60 لاکھ امریکی ڈالر کے مساوی ٹیکس چوری کا الزام ثابت ہوا تھا۔
ٹیکس ایجنسی کے آڈیٹر آئیگارو جونگ مارٹنز کا یہ بھی کہنا تھا کہ اگر نیمار واجب الادا رقم ادا کر دیتے ہیں تو ان کے جیل جانے کا امکان نہیں ہے۔
انھوں نے کہا کہ ’جو کچھ گذشتہ برس تھا اس میں کوئی تبدیلی نہیں آئی۔ اگر وہ اپنے ذمے واجب الادا رقم دے دیتے ہیں تو معاملہ ختم ہو جائے گا۔ ہمارے قوانین زیادہ سخت نہیں ہیں۔‘
خیال رہے کہ نیمار کے خلاف ٹیکس بچانے اور دھوکہ دہی کے الزامات کے تحت سپین میں بھی ایک مقدمہ جاری ہے۔
سپین میں استغاثہ کا موقف ہے کہ نیمار، ان کے خاندان اور بارسلونا فٹبال کلب نے گذشتہ ستمبر میں برازیلی کلب سینٹوس سے ان کی ہسپانوی کلب کو منتقلی کے سلسلے میں دی جانے والی اصل رقم ظاہر نہیں کی۔
بارسلونا کا کہنا ہے کہ اس نے سنہ 2013 میں نیمار کو پانچ کروڑ 71 لاکھ یورو ادا کیے تھے جس میں چار کروڑ یورو ان کے والدین جبکہ 71 لاکھ یورو برازیل کلب سینٹوس نے وصول کیے تھے۔
تاہم تفتیش کاروں کا کہنا ہے کہ بارسلونا نے نیمار کو پانچ کروڑ 71 لاکھ یورو نہیں بلکہ آٹھ کروڑ، 30 لاکھ یورو ادا کیے تھے اور بارسلونا کلب نے اس معاہدے کے کچھ حصے کو پوشیدہ رکھا تھا۔
23 سالہ نیمار نے سنہ 2015 میں بارسلونا کو پانچ ٹرافیاں جتوانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔

یہ بھی دیکھیں

پاکستان نے نیوزی لینڈ کو آخری ٹی ٹوئنٹی میں شکست دیدی

نیپئر: پاکستان نے تیسرے اور آخری ٹی ٹوئنٹی میچ میں نیوزی لینڈ کو 4 وکٹ …