جمعرات , 4 مارچ 2021

ناروے نے مہاجرین کو واپس روس بھیجنے کا سلسلہ دوبارہ شروع کر دیا

1380397

ناروے کے حکام نے روسی سرحد پار کر کے آنے والے مہاجرین کو واپس بیجھنے کا سلسلہ دوبارہ شروع کر دیا ہے، مہاجرین کو طیاروں کے ذریعے ماسکو اور سینٹ پیٹرز برگ بھیجا جائے گا۔

رپورٹ ہے کہ پانچ لوگ اس نئے طریقہ سے روس بھیجے جا چکے ہیں۔

گ زشتہ سال موسم خزاں میں ساڑھت ہانچ ہزار سے زیادہ مہاجرین روس کی سرحد پار کر کے ناروے پہنچے تھے۔ ان میں سے زیادہ تر کو نارویجن حکام روس یا ان ممالک میں بھیجنے کا منصوبہ بنا رہے ہیں جہاں سے یہ آئے تھے۔ جنوری میں مہاجرین کو بس کے ذریعے روسی سرحد سے واپس بھیجنے کا منصوبہ روسی حکام کی تجویز ہرسلامتی کے تقاضوں کی وجہ سے معطل کر دیا گیا تھا۔ بعد میں ماہرين کے گروپ نے جس میں دونوں ممالک کے نمائندے شامل تھے اس بات پر اتفاق کیا کہ 300-200 لوگوں کو طیاروں کے ذریعے بھیجا جائےگا۔

روس ناروے سرحد پار کر کے آنے والے مہاجرین کی تعداد میں دس گنا اضافہ ہو جانے کے بعد ناروے کے حکام نے قانون میں ترمیم کی ہے جس کے مطابق وہ مہاجرین جو محفوظ ممالک سے آئے ہیں جیسے روس سمجھا جاتا ہے، وہ ناروے میں پناہ حاصل نہیں کر سکتے۔ ناروے کے حکام ہر کسی کو روس بھیجنے کا ارادہ رکھتے ہیں تاہم روس متعلقہ دستاویزات کے بغیر ایسے مہاجرین کے داخلے کے خلاف ہے۔

یہ بھی دیکھیں

شام پر حملہ کرنے والے اسرائیلی میزائل تباہ

شامی فوج نے صوبہ حماہ کی فضا میں اسرائیل کے میزائلی حملوں کو ناکام بنا …