بدھ , 22 نومبر 2017

ترک صدر رجب طیب اردگان کی زندگی کامختصر جائزہ

تاریخ پیدئش: 26فروری 1954ء
جائے پیدائش: استنبول(ترکی)
پورا نام:رجب طیب اردگان
والد کانام:احمد اردگان(کوسٹ گارڈ اوربحری کپتان تھے)
والدہ کانام: تنزیل اردگان
شریکہ حیات: ایمان اردگان (4 جولائی 1978ء۔تاحال)
بچے:سمیہ،بلال،احمد،اسرا
تعلیم:مرمرہ یونیورسٹی،اکنامک اورادارتی سائنس،1981ء
دیگر حقائق:
۔اسلامی حلقوں میں سرگرم رہ چکے ہیں(ستر اوراسّی کےدہائیوں میں)
۔سیاسی کیریئر سےپہلے اردگان فٹبال کےکھلاڑی تھے۔
۔کرپشن اورفضول خرچی کی وجہ سےشدید تنقید کی زد میں آئے،الخصوص اُس وقت جب انہوں نے 1000 کمروں پرمشتمل صدارتی محل تعمیر کروایا۔
۔اردگان اوران کی سیاسی جماعت(جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ)پارٹی نےمذہب پرعائد پابندی کاقانون معطل کردیا جس میں خواتین کےحجاب پرعائد پابندی بھی شامل ہے۔
عملی زندگی:
1984ء: ویلفیئر پارٹی کےڈسٹرکٹ ہیڈ منتخب ہوئے۔
1985ء: ویلفیئر پارٹی کے استنبول پروویژنل ہیڈ منتخب ہوئے اورپارٹی کےسنٹرل ایگزیکٹو بورڈ کےممبر بھی۔
1994ء۔1998ء:استنبول کےمیئر کےعہدے پرفائز رہے۔
1998ء: ویلفیئر پارٹی پرپابندی عائد کردی جاتی ہے۔اردگان کومذہبی نفرت کاشعر پڑھنےپر4 ماہ کی جیل ہوجاتی ہے۔
اگست 2001ء: اسلامی جماعت(جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ پارٹی) کی بنیاد رکھنے میں کردار ادا کرتے ہیں۔
2002ء۔2003ء: اردگان کی جماعت(جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ پارٹی) واضح برتری سے انتخابات میں فتح یاب ہوجاتی ہے۔ جس کے بعد اردگان ترکی کےوزیراعظم بن جاتے ہیں۔
2003ء۔2014ء: بطور وزیراعظم اپنے فرائض سرانجام دیتے ہیں۔
جون 2011ء:جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ پارٹی اکثریت سے جیتتے ہوئے ارد گان کےلیے تیسرا دورحکومت کی راہ ہموار کردیتی ہے۔
10 اگست 2014ء: اردگان پہلی مرتبہ صدر منتخب ہوجاتے ہیں۔
7 جون 2015ء: ترکی میں پارلیمانی انتخابات منعقد ہوتے ہیں،جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ پارٹی 41 فیصد ووٹ حاصل کرنےمیں کامیاب ہوپاتی ہےجودوتہائی اکثریت نہیں اس نتیجے کی وجہ سے اردگان کوپارلیمانی نظام کو صدارتی نظام میں تبدیل کرنے میں مشکلات پیدا ہوجاتی ہیں۔
15۔16 جولائی: ترکی میں فوجی انقلاب کی کوشش کی جاتی ہے جسے ناکام بنادیا جاتا ہے، اس ناکام انقلاب میں 161 افراد اہلاک اور1140 زخمی ہوجاتے ہیں۔اردگان حکومت کوبچانے کےلیے عوام سےاپیل کرتے ہیں کہ وہ سڑکوں پر نکلیں اورانقلابیوں کامقابلہ کریں۔

یہ بھی دیکھیں

ٹویٹر پر ٹرمپ کے ٹویٹس

ٹویٹر پر ٹرمپ کے ٹویٹس