بدھ , 22 نومبر 2017

چین کے صدر ژی چن پنگ کی زندگی کا مختصر جائزہ

نام: زی چن پنگ
تاریخ پیدائش: جون 1953ء
مقام پیدائش: فوپنگ کاؤنٹی، صوبہ شانجی چین (کچھ ذرائع کے مطابق ہیکنگ یا بیجنگ)
باپ کا نام: زی زونگ چن (چاننا کی کمیونسٹ انقلابی پارٹی کے بانی رہنماؤں میں سے ہیں)
والدہ: کی چن
بیوی: پنگ لیون
بچے: پنگ لیون سے (زی منگ زی)
تعلیم: 1979ء میں سنگھوا یونیورسٹی سے کیمیکل انجینئرنگ کی ڈگری حاصل کی۔ 2002ء میں سنگھوا یونیورسٹی سے ہی LLD کی ڈگری۔
زی جن پنگ کو انقلابی تحریک کا بیٹا کہا جاتا ہے کیونکہ ان کے والد کمیونسٹ انقلابی تحریک کے بانی لیڈروں میں سے ایک تھے۔
سیاسی سفر:
1969ء سے 1975ء: لیانگ می ہاشانزی میں بطور زرعی مزدور کام کیا۔ زی جن پنگ کا شمار ان لاکھوں نوجوانوں میں ہوتا ہے جن کو ماوزے تنگ کی پالیسیوں کے تحت شہروں سے دیہات کی طرف زرعی کام کرنے کے لیے بھیجا گیا تھا۔
1974ء: چائنا کی کمیونسٹ پارٹی میں شامل ہوئے۔
1979ء سے 1982ء: چین کے وزیر دفاع جینگ بیاؤ کے ذاتی سیکرٹری کی حیثیت سے کام کیا۔
1982ء سے 1985ء: چین کے صوبہ ہیبی کی کاونٹی زینگ ڈنگ میں
ڈپٹی سیکرٹری اور پھرسیکرٹری کے طور پرکام کیا۔
اپریل 1985ء: بطور زرعی وفد کے امریکہ کا پہلا دورہ کیا۔
1985ء سے 1988ء: صوبہ فیوجیان کے ساحلی شہر کویامین میں بطور ایگزیکٹو وائس میئر کے فرائض سر انجام دیئے۔
1983ء سے 1990ء: صوبہ فیوجیان کے شہر ننگ ڈی میں بطور پارٹی سیکرٹری کام کیا۔
1990ءسے1996ء:صوبہ فیوجیان کےشہر فزہومیں بطور پارٹی سیکرٹری کام کیا۔
1996ء سے 1999ء: صوبہ فیوجیان میں ڈپٹی پارٹی سیکرٹری رہے۔
1999ء سے 2000ء: صوبہ فیوجیان کے نائب گورنر رہے۔
2000ء سے 2002ء: صوبہ فیوجیان کے گورنر رہے۔
2002ء سے 2007ء: صوبہ زی جیانگ میں بطور پارٹی سیکرٹری کام کیا۔
2007ء: شنگھائی کے پارٹی سیکرٹری مقرر ہوئے۔
اکتوبر 2007ء سے تا حال: پولیٹیرو سٹینڈنگ کمیٹی کے ممبر ہیں۔
2007ء سے 2013ء: سینٹرل پارٹی سکول کے صدر کے طور پر کام کیا۔
2008ء سے 2013ء: پیپلز ریپبلک آف چائنا کے نائب صدر کے طور پر فرائض سر انجام دیئے۔
2010ء سے 2012ء: سینٹرل ملٹری کمیشن کے نائب صدر کے طور پر کام کیا۔
فروری 2012ء: امریکہ کے دارالحکومت واشنگٹن ڈی سی میں چین کی پالیسی کے متعلق تقریر کی اس کے علاوہ امریکی صدر باراک اوباما، نائب صدر جوئے بیڈن، سیکرٹری آف سٹیٹ ہیلری کلنٹن اور سیکرٹری دفاع لیون پینیٹا سے ملاقاتیں کیں۔
15 نومبر 2012ء: ہو جن تاؤ کے بعد بطور جنرل سیکرٹری سینٹرل
پارٹی کمیشن (سینٹرل کمیٹی) اور بطور چیئرمین کمیونسٹ پارٹی سینٹرل ملٹری کمیشن ذمہ داریاں سنبھال لیں۔
14مارچ 2013ء: پیپلز ریپبلک آف چائنا کے صدر منتخب ہوئے۔
اکتوبر 2014ء: زی جن پنگ کے خطابات پر مشتمل ایک کتاب ’’دی گورنس آف چائنا‘‘ شائع ہوئی جس کو فارن لینگویج پریس نے شائع کیا تھا۔
12 نومبر 2014ء: امریکی صدر باراک اوباما اور زی جن پنگ کے درمیان ماحولیاتی آلودگی کو کم کرنے کے لیے ایک معاہدے پر دستخط ہوئے، اس معاہدے پر عملدرآمد کے بعد توقع کی جا رہی ہے کہ آنے والی دو دھائیوں میں دونوں ممالک میں ماحولیاتی آلودگی تین چوتھائی کم ہو جائے گی۔ وائٹ ہاؤس نے اعلان کیا کہ یہ پہلی دفعہ ہوا کہ ہے کہ چین کاربن کے اخراج کو کم کرنے پر راضی ہوا ہے۔
22 سے 27 ستمبر 2015ء: چینی صدر زی جن پنگ اپنے پہلے امریکی دورے پر واشنگٹن ڈی سی میں صدر باراک اوباما سے ملاقات کرنے سے پہلے امریکہ کے شہر سیٹل میں گئے جہاں انہوں نے صنعتی اور تجارتی رہنماؤں سے ملاقاتیں کیں۔
20 سے 23 اکتوبر 2015ء: برطانیہ کے ساتھ معاشی اور سفارتی تعلقات کو مضبوط بنانے کی غرض سے برطانیہ کا پہلا سرکاری دورہ کیا۔
7 نومبر 2015ء: تائیوان کے صدر ماینگ جیو سے سنگاپور میں ملاقات کی۔ 1949ء میں چائنا کی خانہ جنگی کے بعد چین اور تائیوان کے کسی بھی لیڈر کی یہ پہلی ملاقات تھی۔
27 اکتوبر 2016ء: زی جن پنگ کو چائنا کی کمیونسٹ پارٹی کے عظیم ترین لیڈر کے اعزاز سے نوازا گیا۔ بنیادی طور پر یہ اعزاز چائنا کمیونسٹ پارٹی کے بانی چیئرمین ماؤزے تنگ کے پاس ہے جن
کوجدید چائنا کاباپ تصور کیا جاتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

حزب اللہ سمیت کوئی مزاحمتی تنظیم دہشت گرد نہیں:حماس

مقبوضہ بیت المقدس (مانیٹرنگ ڈیسک) اسلامی تحریک مزاحمت ’حماس‘ نے عرب لیگ کے قاہرہ میں ...