ہفتہ , 25 مارچ 2017

مالی بدعنوانی کا الزام، صیہونی وزیراعظم سے پولیس تیسری بار پوچھ گچھ کرے گی

یروشلم (مانیٹرنگ ڈیسک )صیہونی پولیس نے اعلان کیا ہے کہ مالی بدعنوانی میں ملوث ہونے کے سلسلے میں وزیراعظم بنیامین نتن یاہو سے ایک بار پھر تفتیش کی جائے گی۔ہمارے نمائندے کی رپورٹ کے مطابق صیہونی حکومت کے ذرائع ابلاغ نے رپورٹ دی ہے کہ اسرائیلی اور غیر اسرائیلی تاجروں سے دسیوں ہزار ڈالر کی رشوت وصول کرنے کے الزام میں صیہونی وزیراعظم نتن یاہو سے ایک ہفتے میں تیسری بار پولیس تفتیش کرے گی۔ اس سے قبل اسرائیل کی پولیس نے پیر اور جمعرات کو نتن یاہو سے آٹھ گھنٹے کی تفتیش کی تھی۔
دریں اثنا صیہونی حکومت کے ایک مخالف صیہونی لیڈر اسحاق ہرٹزوگ نے بدعنوانی میں ملوث ہونے کی بناء پر نتن یاہو کے استعفے کا مطالبہ کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ انھوں نے اگر استعفی نہیں دیا تو انھیں اسرائیل کی عدالت عالیہ کا سامنا کرنا پڑے گا۔دوسری جانب لبنان کی العہد ویب سائٹ نے باخبر ذرائع کے حوالے سے رپورٹ دی ہے کہ صیہونی وزیراعظم بنیامین نتن یاہو نے اپنا دورہ ڈیووس منسوخ کر دیا ہے اس لئے کہ صیہونی پولیس نے نتن یاہو سے کہا ہے کہ تفتیش کے عمل اور قانونی کارروائی میں کوئی رکاوٹ پیدا نہ ہونے پائے اس لئے وہ غیر ملکی سفر پر نہ جائیں۔
قابل ذکر ہے کہ نتن یاہو کے علاوہ اسرائیل کے کئی سابق حکام، مالی بدعنوانیوں ملوث ہونے کے الزام میں جیل میں بند ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

روس پر طالبان کو اسلحہ فراہمی کا امریکی الزام، ناکامی چھپانے کی کوشش ہے۔ روس

ماسکو(مانیٹرنگ ڈیسک) روسی وزارت خارجہ نے شدت پسند تنظیم طالبان کو اسلحہ فراہمی کے امریکی ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے