جمعرات , 19 جولائی 2018

افغانستان کی شیعہ خواتین نے بھی داعش کے خلاف بندوق اٹھا لی

 

کابل (مانیٹرنگ ڈیسک ) افغانستان کے بعض صوبوں میں تکفیری دھشتگردوں کے ذریعے شیعوں پر کئے گئے حملوں کے بعد اب خواتین نے بھی اپنے بچاو کے لیے بندوقیں اٹھا لی ہیں۔افغانستان کے نائب صدر محمد محقق کا کہنا تھا کہ تکفیری دھشتگرد اس طرح کی کاروائیوں سے ملک کے اندر قومی اور مذہبی اختلافات کی ہوا پھیلا رہے ہیں لیکن افغانستان کے عوام کبھی بھی اپنے ملک میں مذہب کے نام پر جنگ نہیں کریں گے۔
ایسے حال میں کہ افغانستان میں حکومت بھی تکفیری دھشتگردوں کا قلع قمع کرنے میں مصروف عمل ہے مردوں کے ساتھ ساتھ عورتوں نے بھی مردوں کے شانہ بشانہ دھشتگردوں سے لڑ کر اپنے آئین و مذہب کو بچانے کے لیے بندوق ٹھان لی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

ملائیشیا میں مہاتیر محمد نے ’قرض اتارو ملک سنوارو‘ اسکیم شروع کردی

کوالالمپور(مانیٹرنگ ڈیسک)ملائیشیا کی حکومت نے اندرونی اور بیرونی قرضے اتارنے کے لیے مدد کی خاطر ...