اتوار , 7 مارچ 2021

دمشق اور حمص میں خودکش حملوں میں شہداء کی تعداد 140 تک پہنچ گئی

شام کے دارالحکومت دمشق اور حمص میں یکے بعد دیگرے خودکش بم دھماکوں میں شہداء کی تعداد 140 تک پہنچ گئی ہے جبکہ 170 سے زائد افراد زخمی ہوگئے ہیں حملے کی ذمہ داری دہشت گرد تنظیم داعش نے قبول کرلی ہے۔

3

شام کے دارالحکومت دمشق اور حمص میں یکے بعد دیگرے خودکش بم دھماکوں میں شہداء کی تعداد 140 تک پہنچ گئی ہے جبکہ 170 سے زائد افراد زخمی ہوگئے ہیں حملے کی ذمہ داری دہشت گرد تنظیم داعش نے قبول کرلی ہے۔

ذرائع کے مطابق دمشق میں حضرت زینب سلام اللہ علیھا کے روضہ مبارک کے قریب کار بم دھماکے کے بعد یکے بعد دیگرے دو خودکش حملوں میں 96 افراد شہید ہوگئے ہیں جن میں بچے اور عورتیں بھی شامل ہیں ۔جبکہ حمص میں ہونے والے بم دھماکے میں بھی 44 سے زائد افراد شہید ہوگئے ہیں۔

دہشت گرد تنظیم داعش نے اپنی ویب سائٹ پر دارالحکومت دمشق اور حمص میں حملوں کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا کہ اس کے دو خودکش دہشت گردوں نے سیدہ زینبؓ کے حرم کے قریب خود کو دھماکوں سے اڑایا، جبکہ دو نے حمص میں کار بم دھماکے کیے۔ شام کے لیے اقوام متحدہ کے خصوصی سفیر اسٹافن دی مِستورا نے حملوں کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

دوسری جانب امریکی وزیر خارجہ جان کیری نے حملوں کو جنگ بندی کی کوششوں کو نقصان پہنچانے کی کوشش قرار دیتے ہوئے کہا عالمی طاقتوں نے شام میں جنگ بندی کا فیصلہ اسی لیے کیا تاکہ معصوم لوگوں کی جان بچائی جاسکیں۔ ادھر شامی حکومت نے بھی بم دھماکوں کی شددی الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ عالمی برادری کو ترکی اور سعودی عرب پر دباؤ ڈالنا چاہیے کہ وہ دہشت گردوں کی حمایت اور پشتپناہی بند کریں۔

یہ بھی دیکھیں

طالبان کے سیاسی وفد کا دورہ ایران

ایران کی وزارت خارجہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ طالبان کا ایک سیاسی وفد …