اتوار , 28 فروری 2021

ہمیں مذاکرات کی جلدی نہیں: طالبان لیڈر

افغانستان میں امن مذاکرات کے لئے اسلام آباد کابل سمجھوتے پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے طالبان نے کہا ہے کہ اسے مذاکرات میں شامل ہونے کی جلدی نہیں ہے-
افغان طالبان کے دو لیڈروں نے پیر کو روزنامہ اکسپریس ٹریبیون کو انٹرویو دیتے ہوئے کہا کہ چونکہ حکومت افغانستان، سیاسی مذاکرات کے لئے واضح اسٹریٹیجک نہیں رکھتی لہذا انہیں بھی مذاکرات میں شامل ہونے کی جلدی نہیں ہے- طالبان کے دونوں سینئر لیڈروں نے اپنا نام ظاہر نہ کئے جانے کی شرط پر تاکید کے ساتھ کہا کہ افغان حکومت کو امن مذاکرات شروع کرنے کے لئے لازمی حالات فراہم کرنا چاہئے اور اسلام آباد کے ساتھ طالبان کے رابطوں کا پروپیگنڈہ بند کردینا چاہئے-طالبان کے دونوں سینئر لیڈروں نے کہا کہ صرف پاکستان ہے جو افغانستان میں امن کے عمل میں مدد کر سکتا ہے لیکن بہرحال مذاکرات کا فیصلہ، افغان حکومت کو کرنا ہے- افغانستان کی حکومت، پاکستان سے مطالبہ کرتی ہے کہ وہ طالبان کے درمیان اپنے اثر و رسوخ کے پیش نظر امن مذاکرات شروع کرنے کی زمین ہموار کرے- واضح رہے پاکستانی چیف آف آرمی اسٹاف جنرل راحیل شریف کے دورہ افغانستان کے موقع پر فریقین، امن مذاکرات کا ایجنڈہ تیار کرنے پر راضی ہو گئے تھے-

یہ بھی دیکھیں

فلسطین کی آزادی اور اسرائیل کا خاتمہ، پاکستانی قوم کی خواہش

حماس کے رہنما اسمٰعیل ہنیہ نے کہا ہے کہ پاکستان نے ہمیشہ فلسطین کی حمایت …