منگل , 22 اکتوبر 2019

گولن کا بارزانی کو خط، اردوغان سے محتاط رہنے کی نصیحت

انقرہ (مانیٹرنگ ڈیسک) ترکی کے اپوزیشن لیڈر فتح اللہ گولن نے عراقی کردستان کے سربراہ مسعود بارزانی کو ایک خط لکھ کر خبردار کیا کہ وہ ترک صدر اردوغان کا آسان شکار نہ بنیں۔ گولن نے بارزانی کو خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ رجب طیب اردوغان سے تعلقات پر نظر ثانی کریں کیونکہ اس کے خطرناک نتائج سامنے آ سکتے ہیں۔ گولن نے لکھا: مجھے خبر ہے کہ آپ نے کئی بار ترکی میں اردوغان سے ملاقات کی ہے۔ آپ اپنے آپ کو اردوغان کا اتحادی اور دوست سمجھتے ہیں اور اسی وجہ سے آپ نے شمال عراق سے نکلنے والے تیل کا سودا کر ڈالا۔

فتح اللہ گولن نے لکھا: میرے ساتھیوں نے بتایا کہ اردوغان سے دوستی کی وجہ سے شمالی عراق کی تمام پارٹیوں سے آپ کے اختلافات ہیں اور ان پارٹیوں کی رضایت کے بغیر ہی آپ نے اردوغان اور ان کے داماد سے تیل بیچنے کا 50 سالہ معاہدہ کر لیا ہے۔انہوں نے لکھا: آپ نے عراق کی مرکزی حکومت کو اعتماد لئے بغیر ترک فوج کو موصل میں آنے کی دعوت دی جس کی وجہ سے مرکزی حکومت سے آپ کے اختلافات بڑھ گئے۔

فتح اللہ گولن نے کہا کہ اگر بارزانی کرکوک اور موصل کا تیل بھی اردوغان کو فروخت کر دیں تب بھی جو خدمات میں نے اردوغان کے لیے انجام دی ہیں ان کے مقابل میں ہیچ ہے۔ جلد ہی اردوغان کی خیانتیں سامنے آ جائیں گی۔ انہوں نے لکھا: کیا عبد اللہ گل (اے کے پی کے سربراہ اور سابق ترک صدر) اور حسنات علی بابا جان (ترکی کے سابق وزیر خارجہ) سے زیادہ بھی کسی نے وفاداری کا ثبوت دیا ہے؟ کیا داوود اوغلو (ترک وزیر خارجہ) کو بھول گئے؟ اردوغان نے سب کو کنارے لگا دیا۔ انہوں نے بارزانی سے خطاب کرتے ہوئے لکھا: جن افراد کا میں نے نام لیا یہ اردوغان کے سب سے قریبی افراد تھے جب اردوغان نے انہیں نہیں بخشا تو آپ ان کے لیے بہت آسان شکار ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

ترک اور کرد کا ایک دوسرے پر جنگ بندی کی خلاف ورزی کا الزام

انقرہ: شمالی شام میں 5 روزہ جنگ بندی کے اعلان کے باوجود فریقین کی جانب …