منگل , 21 فروری 2017

ایک عام عادت جو بینائی کے لیے نقصان دہ

 

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)اپنی آنکھوں پر چشمہ لگنے سے بچنا چاہتے ہیں ؟ تو اسمارٹ فونز کا استعمال زیادہ نہ کریں۔یہ بات ایک نئی طبی تحقیق میں سامنے آئی ہے۔ویسے تو یہ بات سب مانتے ہیں کہ بہت زیادہ دیر تک اسمارٹ فونز کی اسکرینز کو دیکھنا اچھا نہیں ہوتا مگر اس تحقیق میں بتایا گیا کہ یہ عادت اندازوں سے بھی زیادہ نقصان دہ ہوتی ہے خاص طور پر آنکھوں کے لیے۔
تحقیق کے مطابق جو نوجوان اپنا زیادہ وقت اسمارٹ فونز استعمال کرتے ہوئے گزارتے ہیں ان میں آنکھوں کے مختلف امراض کا خطرہ بہت زیادہ ہوتا ہے۔ان امراض میں آنکھوں کی خشکی نمایاں ہے جس کے نتیجے میں آنکھیں آنسو بنانے میں ناکام رہتی ہیں جس کے نتیجے میں وہ سرخ، سوجن اور خارش کا شکار ہوجاتی ہیں۔عام طور پر ایسا بوڑے افراد کے لیے ہوتا ہے مگر اسمارٹ فونز کے نتیجے میں نوجوان اس کا زیادہ شکار ہورہے ہیں اور بینائی کی کمزوری کا خطرہ وقت کے ساتھ بڑھتا چلا جاتا ہے۔
تحقیق میں بتایا گیا کہ جب لوگ اسکرینز کو دیکھتے ہیں تو کم پلکیں جھپکاتے ہیں جس کے نتیجے میں اس مرض کا خطرہ بڑھتا ہے۔محققین کا کہنا تھا کہ آنکھیں خشک ہونے کے ساتھ ساتھ بینائی کے مختلف امراض کا خطرہ بھی بڑھ جاتا ہے جسے طبی زبان میں ڈیجیٹل آئی اسٹرین کا نام دیا گیا ہے۔مختلف رپورٹس میں یہ بات ثابت ہوچکی ہے دو سے ڈھائی گھنٹے روزانہ اسمارٹ اسکرینز کے سامنے بیٹھنا آنکھوں کے اس مرض کا خطرہ بڑھاتا ہے۔یہ نئی تحقیق طبی جریدے بی ایم سی آپٹالمولوجی میں شائع ہوئی۔

یہ بھی دیکھیں

ٹی بی کے مکمل خاتمے کیلیے دو نئے طریقہ علاج دریافت

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک ) طبی سائنس میں ترقیوں کے باوجود اب بھی تپِ دق (ٹی بی) ...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے