بدھ , 3 مارچ 2021

حسنین اشرف

جاگدے رہنا!

(ارشاد بھٹی) کیا کیا بتایا جائے، ملک، ملکی ادارے، سب کچھ خسارے میں، شریفس سے زرداریز تک، بلاول سے حسن، حسین نواز، سلمان شہباز تک، سب سونے کی کانیں، انہیں چھوڑیں، انور مجید کو لے لیں، 2002ء میں پہلی شوگر مل لگائی، آج 2018ء میں 16 شوگر ملیں، 19 پاور جنریشن منصوبے اور 96 کمپنیاں، 2006 میں 25 لاکھ قرضہ …

مزید پڑھیں »

زرداری پیپلزپارٹی پر بھی بھاری

("اعزاز سید”) ستمبر کے پہلے ہفتے میں سابق صدر آصف علی زرداری کو گرفتار کرنے کی تیاری مکمل تھی۔ معاملہ اتنا قریب تھا کہ ایف آئی اے کے سربراہ بشیر میمن نے اپنا بیرون ملک کا سرکاری دورہ بھی ملتوی کر دیا۔ ظاہر ہے گرفتاری کا سارا عمل ان کی نگرانی کے بغیر ممکن نہیں تھا۔ جولائی میں ایف آئی …

مزید پڑھیں »

پاکستان کو بار بار آئی ایم ایف کا دروازہ کیوں کھٹکھٹانا پڑتا ہے

پاکستان کا معاشی فارمولہ بلکل خراب ہے کیوں کہ اس میں باہر کے ممالک سے غیر ملکی کرنسی میں قرض لینا، لارج سکیل انفراسڑکچر تعمیر کرنا، تھوڑی ترقی کرنا، اور اگلی بار ترقی کے لیے پھر قرض لینا ہی ایک معمول ہے۔ یہ ہی تو سب کچھ پچھلی حکومت نے کیا ہے اور اس سے پچھلی گورنمنٹ نے بھی۔ یہ …

مزید پڑھیں »

کبھی ہمارے تعلیمی ادارے ‘ اساتذہ ایسے بھی تھے

(رؤوف طاہر)  یہ محض اتفاق تھا کہ کوئی دو ہفتے قبل ”شیخ الجامعہ کے لیے نیب کی ہتھکڑی‘‘ اس موضوع پر بارش کا پہلا قطرہ بن گیا‘ جس کے بعد شاید ہی کوئی اہم کالم نگار ہو جس نے اساتذہ کے ساتھ اس شرمناک سلوک پر صدائے احتجاج بلند نہ کی ہو۔ ان دنوں سیاست پر لکھنے کے لیے موضوعات …

مزید پڑھیں »

خاشقجی کے بیٹے اور بھائی سے شاہی تعزیت کی تصویر

(عثمان جامعی) تصویریں بولتی ہیں، مگر یہ عکس تو چیخ رہا ہے، سینے میں دبی اور گھٹی ہوئی چیخ، جسے سینہ خانے کی بند دیواروں ہی میں مر جانا ہے، دھڑکنوں کا سلسلہ جاری اور سانسوں کا ردھم سلامت رکھنا ہو تو ایسی چیخوں کو حلق کنارے ہی مار دینا پڑتا ہے، جیسے ناجائز بچے پیٹ میں مار دیے جاتے …

مزید پڑھیں »

عمران خان، رؤف کلاسرا سے پریشان ہیں

(ارشاد بھٹی) وزیراعظم سے یہ دوسری ملاقات، پہلی بار ملے وزیراعظم سیکرٹریٹ میں، صحافی 20 سے زائد، اس بار بنی گالہ میں، صحافی 15، میرا بنی گالہ کا بھی یہ دوسرا پھیرا، اس سے پہلے استادِ گرامی حسن نثار کے ہمراہ بنی گالہ تب گیا جب شاہد خاقان عباسی وزیراعظم تھے، وہ ملاقات اس لئے بھی یادگار کہ اس روز …

مزید پڑھیں »

شکریہ سعودی عرب! ۔ ۔ ۔ لیکن؟

(حامد میر) عرب دنیا کے اس عظیم عالم کو علامہ محمد اقبالؒ سے بڑی محبت تھی۔ شام کی دمشق یونیورسٹی کے اُستاد پروفیسر محمد سعید رمضان البوتی کے لئے اقبالؒ ایک ایسے مرشد کامل کی حیثیت رکھتے تھے جس کی نوائے شاعرانہ میں بادشاہوں اور آمروں کے خلاف بغاوت کا پیغام تھا۔ البوتی کے ساتھ اقبالؒ کا پہلا تعارف قاہرہ …

مزید پڑھیں »

صحافی سے خوفزدہ بادشاہ!

(رؤف کلاسرا) اسلام آباد میں بیس برس کی صحافت کے بعد یہ تو مجھے اندازہ ہو گیا ہے کہ حکمران! صحافی اور صحافت سے ہمیشہ خوفزدہ رہتے ہیں۔ اس خوف کا ایک ہی حل پاکستان جیسے ملکوں میں نکالا جاتا ہے کہ آپ صحافی اور صحافت کو خرید لو یا انہیں کرپٹ کر دو۔ اگر صحافی بکنے سے انکاری ہو‘ …

مزید پڑھیں »

مڈل ایسٹ اکھاڑہ، ریاض کانفرنس اور پاکستان

سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں عالمی سرمایہ کاری کانفرنس کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے منگل کو وزیراعظم عمران خان نے بڑی دلسوزی سے پاکستان کی مسائل زدہ معیشت کا جامع تجزیہ پیش کیا اور ان اقدامات کا ذکر کیا جو ان کی حکومت ملک میں سرمایہ کاری کے فروغ اور معاشی بحران کے حل کے لئے کر رہی …

مزید پڑھیں »

جگہوں کے نام کیوں نہ بدلیں؟

(وسعت اللہ خان) پچھلے ہفتے یہاں سندھ کے دارالحکومت کولاچی میں سرحد پار سے آئی ایک خبر کے مطابق آریا ورت (قدیم بھارت) کے سب سے گنجان صوبے کوسالا (قدیم اتر پردیش) کی راجدھانی لکھناوتی (لکھنؤ) میں مہامنتری شریمان اجے موہن بشت (یوگی ادتیا ناتھ کا پیدائشی نام) نے گھوشنا کی کہ آئندہ سے الہ آباد کو پریاگ راج پکارا …

مزید پڑھیں »