بدھ , 10 اگست 2022
تازہ ترین

ایرانی صدر کا جواد ظریف کا استعفیٰ قبول کرنے سے انکار

تہران(مانیٹرنگ ڈیسک) ایرانی صدر حسن روحانی نے وزیرخارجہ جواد ظریف کا استعفیٰ قبول کرنے سے انکار کردیا۔تفصیلات کے مطابق ایرانی وزیرخارجہ جواد ظریف نے گذشتہ روز سوشل میڈیا پر اپنے استعفے کا اعلان کیا تھا تاہم ایرانی صدر نے مسترد کردیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق ایرانی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ حسن روحانی جواد ظریف کا استعفیٰ قبول کرنے سے انکاری ہیں۔ترجمان ایرانی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ ایرانی صدر استعفے کا اعلان کرنے والے جواد ظریف کی کارکردگی سے مطمعن ہیں اور وہ نہیں چاہتے کہ ایرانی وزیر خارجہ مستعفی ہوں۔

دوسری جانب ایرانی پارلیمانی ارکان کی ایک بڑی تعداد نے صدر حسن روحانی کو لکھے گئے ایک ایسے خط پر دستخط کیے ہیں، جس میں ان سے استدعا کی گئی ہے کہ وہ جواد ظریف کے استعفے کو قبول نہ کریں۔جواد ظریف 2013ء سے ایرانی وزیر خارجہ کی ذمہ داریاں نبھا رہے تھے اور عالمی برادری کے ساتھ 2015ء میں طے پانے والے تہران کے جوہری معاہدے کے طے پا جانے میں بھی انہوں نے کلیدی کردار ادا کیا تھا۔

خیال رہے کہ ایران اور امریکا سمیت یورپی طاقتوں کے درمیان طے پانے والے جوہری معاہدے سے امریکا کے انخلا کے بعد جواد ظریف دباؤ کا شکار تھے۔بین الاقوامی ماہرین کا کہنا ہے کہ ایرانی صدر حسن روحانی جواد ظریف کا استعفیٰ قبول کرتے ہیں یا نہیں یہ ایک سوالیہ نشان ہے، البتہ انہوں نے جوہری ڈیل 2015 میں اہم کردار ادا کیا۔

یہ بھی دیکھیں

فلسطینی اور یمنی نوجوانوں کی بہادری کا جذبہ، اسلامی انقلاب سے متاثر ہے۔سید ابراہیم رئیسی

تہران: اسلامی جمہوریہ ایران کے صدر سید ابراہیم رئیسی نے کہا ہے کہ سامراج کے …