منگل , 27 فروری 2024

سمجھوتہ ایکسپریس: ملزمان کا تعلق مودی سرکار سے ہونے کی وجہ سے رہا کیا گیا‘فاروق عبداللہ

سری نگر(مانیٹرنگ ڈیسک) مقبوضہ کشمیرکےسابق وزیراعلیٰ فاروق عبداللہ کا کہنا ہے کہ بھارت میں ہرشخص کو سمجھوتہ ایکسپریس کے ملزمان کی رہائی کی مذمت کرنا چاہیے۔تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیرکے سابق وزیراعلیٰ فاروق عبداللہ نے کہا کہ سمجھوتہ ایکسپریس کے ملزمان کا تعلق مودی سرکار سے ہے، اس لیے رہا کیا گیا۔فاروق عبداللہ نے کہا کہ بھارت میں ہرشخص کو سمجھوتہ ایکسپریس کے ملزمان کی رہائی کی مذمت کرنا چاہیے۔

دوسری جانب کانگریس کے سینئر رہنما کپل سبل نے کہا کہ 2007میں سمجھوتہ ایکسپریس میں 68 افراد جاں بحق ہوئے، کسی کو نہیں معلوم انہیں کس نے مارا۔بھارت کی عدالت نے گزشتہ روز سمجھوتہ ایکسپریس کو دھماکے سے اڑانے والے ملزم سوامی اسیم آنند سمیت 4 افراد کو بری کردیا تھا۔ترجمان دفترخارجہ ڈاکٹرمحمد فیصل نے سمجھوتہ ایکسپریس کے ملزمان کی رہائی کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا تھا کہ سمجھوتہ ایکسپریس کے ملزمان کو چھوڑنا انتہائی قابل مذمت ہے.

یاد رہے کہ 18 فروری 2007 کو بھارت کے شہرہریانہ کے گاؤں کے قریب سمجھوتہ ایکسپریس کے ایک ڈبے میں دھماکا ہوا تھا جس کے بعد بھڑکنے والی آگ نے دو بوگیوں کو اپنی لپیٹ میں لے لیا تھا۔دھماکے کے نتیجے میں 68 افراد جاں بحق ہوئے تھے جن میں سے اکثریت پاکستانیوں کی تھی۔

یہ بھی دیکھیں

بائیڈن کے حماس سے اپنی شکست تسلیم کرنے کے چار اہم نتائج

ایک علاقائی اخبار نے الاقصیٰ طوفان آپریشن کو مختلف جہتوں سے حماس کے خلاف امریکہ …